rss

شمالی کوریا کے مسئلے پر سلامتی کونسل کے ہنگامی اجلاس میں نکی ہیلی کا بیان

English English, العربية العربية, Français Français, Русский Русский

 

برائے فوری اجراء
5 جولائی 2017

اقوام متحدہ میں امریکہ کی مستقل سفیر نکی ہیلی نے آج سہ پہر شمالی کوریا کے مسئلے پر سلامتی کونسل کے ہنگامی اجلاس میں خطاب کیا۔ انہوں نے شمالی کوریا کے حالیہ بین البراعظمی بیلسٹک میزائل تجربے کے جواب میں جاپان اور جمہوریہ کوریا سے تعلق رکھنے والے اپنے ہم منصبوں کے ساتھ مشترکہ طور پر ہنگامی اجلاس کی درخواست دی تھی۔

اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ ‘شمالی کوریا کی جانب سے عدم استحکام کا باعث بننے والی سرگرمیوں میں اضافہ خطے کے تمام ممالک اور دیگر دنیا کے لیے خطرہ ہے۔ شمالی کوریا کے اقدامات سے اس مسئلے کے سفارتی حل کے امکانات تیزی سے ختم ہو رہے ہیں۔ امریکہ اپنے اور اپنے اتحادیوں کے دفاع کی غرض سے اپنی پوری صلاحیتیں بروئے کار لانے کے لیے تیار ہے۔ ان صلاحیتوں میں ہماری ممتاز مسلح افواج بھی شامل ہیں۔ اگر ناگزیر ہوا تو ہم فوجی طاقت استعمال کریں گے، مگر ہم اس یہ سمت اختیار نہ کرنے کو ترجیح دیں گے۔ ہمارے پاس خود کو ڈرانے دھمکانے اور خطرات کا باعث بننے والوں سے نمٹنے کے دیگر ذرائع بھی موجود ہیں’

‘آنے والے دنوں میں ہم شمالی کوریا کی جانب سے لاحق خطرات میں نئے اضافے کی مناسبت سے عالمی برادری کے ردعمل سے متعلق سلامتی کونسل میں ایک قرارداد پیش کریں گے۔ اگر ہم متحد ہوں تو عالمی برادری شمالی کوریا کی حکومت کے نقدی کے بڑے ذرائع پر روک لگا سکتی ہے۔ ہم ان کی فوج اور ہتھیاروں کے پروگرام کے لیے تیل کی ترسیل پر پابندی عائد کر سکتے ہیں۔ ہم فضائی اور سمندری پابندیوں میں اضافہ کر سکتے ہیں۔ ہم ان کی حکومت کے اعلیٰ عہدیداروں کو احتساب کے کٹہرے میں لا سکتے ہیں’

‘شمالی کوریا کی جانب سے گزشتہ روز کیا گیا بین البراعظمی بیلسٹک میزائل تجربہ سفارتی و معاشی ردعمل میں اضافے کا تقاضا کرتا ہے۔ وقت کم ہے اور عملی اقدام کی ضرورت ہے۔ دنیا کو اطلاع ہو گئی ہے۔ اگر ہم مل کر قدم اٹھائیں تو اب بھی اس مصیبت کو روک سکتے ہیں اور دنیا کو سنگین خطرے سے نجات دلا سکتے ہیں۔ اگر ہم کوئی سنجیدہ قدم اٹھانے میں ناکام رہے تو پھر ایک مختلف ردعمل سامنے آئے گا’

 

###


اصل مواد دیکھیں: https://usun.state.gov/highlights/7889
یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں