rss

برما کی ریاست راخائن کے بحران میں امریکی انسانی امداد حقائق نامہ

Français Français, English English, العربية العربية, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
20 ستمبر 2017

         

امریکہ برما کی ریاست راخائن میں تشدد سے جان بچا کر بنگلہ دیش کا رخ کرنے والے روہنگیا لوگوں، راخائن میں اندرونی طور پر بے گھر ہونےو الوں اور بنگلہ دیش میں انہیں پناہ دینے والوں کے لیے انسانی امداد کی مد میں قریباً 32 ملین ڈالر اضافی رقم مہیا کر رہا ہے۔ امریکہ کو نیویارک میں جنرل اسمبلی کے 72ویں اجلاس کے موقع پر اس امداد کا اعلان کرتے ہوئے خوشی ہے۔ دیگر ترجیحات کے ساتھ ساتھ اس مرتبہ جنرل اسمبلی کا ایک بنیادی موضوع دنیا بھر میں جاری ہنگامی صورتحال میں انسانی امداد میں اضافہ کرنا ہے۔ اس حوالے سے مہاجرین اور انہیں پناہ دینے والوں کو خصوصی طور پر مدنظر رکھا جائے گا۔

نئی فنڈنگ سے مالی سال 2017 میں برما میں اندرون ملک بے گھر ہونے والوں اور خطے میں برمی مہاجرین کے لیے امریکی انسانی امداد کا حجم قریباً 95 ملین ڈالر تک پہنچ جائے گا جس سے روہنگیا لوگوں کے بے مثل مصائب کے خاتمے اور انہیں درکار فوری انسانی امداد کے حوالے سے امریکی عزم کا اظہار ہوتا ہے۔ ہم اس سنگین انسانی بحران میں بنگلہ دیشی حکومت کی فراخدلی کی تحسین کرتے ہیں اور ضرورت مندوں کی مدد یقینی بنانے کے لیے اس کی مسلسل کوششوں کے معترف ہیں۔

لاکھوں کی تعداد میں مہاجرین کی آمد سے وسائل پر بوجھ پڑا ہے اور امدادی اداروں نیز مقامی حکام کا کام بڑھ گیا ہے۔ اس امداد کے ذریعے امریکہ برما اور بنگلہ دیش میں 4 لاکھ سے زیادہ بے گھر لوگوں کو ہنگامی پناہ، خوراک، غذائی، طبی و نفسیاتی معاونت، پانی، نکاسی آب، صحت و صفائی، روزگار، سماجی شمولیت، غیرغذائی اشیا، حادثات و بحرانوں سے بچاؤ اور خاندانی روابط کی بحالی کے ضمن میں مدد دے گا۔

امریکی انسانی امداد سے اقوام متحدہ، دوسرے عالمی اداروں اور خطے میں کام کرنے والی غیرسرکاری تنظیموں کے کاموں میں معاونت میسر آئے گی۔ امریکہ تمام فریقین پر زور دیتا ہے کہ وہ برما کی ریاست راخائن میں لوگوں تک انسانی امداد کی آزادانہ رسائی ممکن بنائیں۔ ہم دیگر عطیہ دہندگان کی بھی حوصلہ افزائی کرتے ہیں کہ وہ بحران سے متاثرہ لوگوں کو مزید امداد کی فراہمی کے لیے ہمارے ساتھ شامل ہوں۔

براہ مہربانی مزید تفصیلات کے  لیے سٹیفنی سینڈوویل سے یہاں رابطہ کیجیے:

[email protected]<mailto:[email protected]

# # #


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں