rss

اعلیٰ فوجی حکام کے ساتھ ملاقات سے قبل صدر ٹرمپ کا بیان

Facebooktwittergoogle_plusmail
English English, العربية العربية, Français Français

وائٹ ہاؤس

دفتر برائے سیکرٹری اطلاعات

برائے فوری اجرا

5 اکتوبر 2017

کیبنٹ روم

6:04 سہ پہر

صدر: آپ کا بے حد شکریہ۔ آج رات یہاں آمد پر آپ سبھی کا شکریہ اور وائٹ ہاؤس میں خوش آمدید۔ میں خاص طور پر وزیر ماٹس اور جنرل ڈنفرڈ کی غیرمعمولی رہنمائی اور خدمات پر ان کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔ میں اس شام اپنے ساتھ موجودگی اور موجودہ انتظامیہ کے لیے وابستگی پر جنرل کیلی اور جنرل مکماسٹر کا بھی شکریہ ادا کرنا چاہوں گا۔ ان کا کام بے حد نمایاں اور زبردست رہا۔

آپ سب کے ساتھ ایک مرتبہ پھر مل کر بہت اچھا لگا۔ جیسا کہ میں نے گزشتہ ملاقات میں کہا تھا کمانڈرانچیف کی حیثیت سے میری اولین ترجیح اپنے لوگوں کو محفوظ رکھنا اور اپنے اعلیٰ فوجی رہنماؤں کو بہتر سے بہتر اقدامات کا اختیار دینا ہے۔ یقین کیجیے یہ کام یہاں موجود لوگوں سے زیادہ بہتر طریقے سے کوئی اور نہیں کر سکتا۔

ہمارے ملک کو قومی سلامتی کے حوالے سے متعدد اہم مسائل کا سامنا ہے۔ تباہ کن قومی سانحات کے ساتھ ساتھ ہمیں بعض بڑی قدرتی آفات کا سامنا کرنا پڑا اور آپ میں بعض ان سے اچھی طرح واقف ہیں کیونکہ آپ کے لوگوں نے زبردست کام کیا ہے جس کی میں ستائش کرتا ہوں۔

تاہم حال ہی میں ہمیں ایسے مسائل کا سامنا ہوا ہے جن سے ہمیں بہت پہلے نمٹ لینا چاہیے تھا۔ ان میں شمالی کوریا، ایران، افغانستان، داعش اور ایسی انحرافی طاقتیں شامل ہیں جن سے دنیا بھر میں ہمارے مفادات کو خطرہ ہے۔ داعش کے حوالے سے بہت بڑی پیش رفت ہوئی ہے اور میرا اندازہ ہے کہ مستقبل قریب میں میڈیا کو اس بارے میں علم ہو جائے گا۔

امریکی عوام کو ان خطرات سے بچانے کی ذمہ داری یہاں موجود لوگوں پر عائد ہوتی ہے۔ میں جانتا ہوں کہ ہم سب امریکی عوام کے تحفظ اور بہبود کو ترجیح دینے کے قائل ہیں اور میں آپ لوگوں سے آپ کے خیالات سننے کا منتظر ہوں۔ اس کے بعد ہم ڈنر کے لیے جائیں گے اور اس پر مزید بات چیت کریں گے۔ تاہم اس وقت میں چند مخصوص معاملات پر بات کرنا چاہتا ہوں اور ہمیں بعض انتہائی اہم حوالوں سے گفت و شنید کرنا ہے۔

شمالی کوریا کے حوالے سے ہمارا مقصد اسے جوہری ہتھیاروں سے پاک کرنا ہے۔ ہم اس آمریت کو اپنی قوم یا اپنے اتحادیوں کے لیے ایسا خطرہ بننے کی اجازت نہیں دے سکتے جس میں انسانی جانوں کا ناقابل تصور حد تک ضیاع ہو۔ ہم اسے روکنے کے لیے ہر وہ قدم اٹھائیں گے جو ہمیں اٹھانا چاہیے۔ یقین کیجیے، اگر ضروری ہوا تو ایسا ہی ہو گا۔

مزید براں ہمیں ایران کو جوہری ہتھیار حاصل کرنے کی اجازت ہرگز نہیں دینی چاہیے۔ ایرانی حکومت مشرق وسطیٰ بھر میں دہشت گردی کی حمایت کرتی ہے اور تشدد، خونریزی و افراتفری پھیلاتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہمیں ایرانی جارحیت اور اس کے جوہری عزائم کا خاتمہ کرنا ہے۔ انہوں نے اپنے معاہدے کی روح کے مطابق عمل نہیں کیا۔ آج رات ہم اس پر بات کریں گے۔

جہاں تک افغانستان کا تعلق ہے تو میں نے وہاں پابندیاں اٹھا لی ہیں اور میدان میں موجود کمانڈروں کے اختیارات میں اضافہ کر دیا ہے۔ آپ اس سے بخوبی آگاہ ہیں اور یہاں موجود سبھی بے حد خوش ہیں کہ بالاآخر ایسا ہو ہی گیا۔ ہم نے گزشتہ بہت سے برسوں کے مقابلے میں گزشتہ آٹھ ماہ کے دوران داعش کو شکست دینے کی اپنی مہم میں بہت سی کامیابی حاصل کی ہے۔

میں اپنے مقصد پر جارحانہ اور موثر طور سے عملدرآمد کے لیے آپ پر اعتماد کرتا ہوں اور آپ نتائج دے رہے ہیں۔ ہم ہر ممکن طور سے اپنی دنیا کو دہشت گردی اور دہشت گردوں سے صاف کر رہے ہیں۔ میں تمام شعبوں میں یہ امر یقینی بنانا چاہتا ہوں کہ ہماری مسلح افواج کے پاس وسائل، تیاری اور کامیابی کی اہلیت موجود ہونی چاہیے۔ جیسا کہ آپ جانتے ہیں امسال ہمارا 700 ارب ڈالر سے زیادہ کا بجٹ ہمیں اس پوزیشن پر واپس لا رہا ہے جہاں ہمیں ہونا چاہیے۔ ہمیں ایک بڑی، طاقتور، مضبوط اور شاندار فوج کی جتنی ضرورت آج ہے پہلے کبھی نہ تھی، ہمیں ایسا ہی ہونا چاہیے اور ہم اس کی جانب نہایت تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔

آگے بڑھتے ہوئے میں یہ توقع بھی رکھتا ہوں کہ جب ضرورت ہوئی آپ مجھے انتہائی سرعت سے فوجی امکانات کے وسیع سلسلے کی بابت آگاہ کریں گے۔ میں جانتا ہوں کہ سرکاری افسرشاہی سست ہے مگر میں افسرشاہی کی رکاوٹوں پر قابو پانے کے لیے آپ پر انحصار کر رہا ہوں۔

آخر میں آپ اور آپ کے اہلخانہ کی جانب سے اپنے ملک کو عظیم بنانے کے لیے دی جانے والی ذاتی نوعیت کی بے پایاں قربانیوں پر میں آپ میں ہر ایک کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔ آپ کی حب الوطنی، بے غرضی اور جرات میرے لیے اور ہماری پوری قوم کے لیے تحریک کا باعث ہیں۔

میں آج ہونے والی بات چیت کا منتظر ہوں اور خاص طور پر کچھ دیر بعد آپ اور آپ کی بیگمات سے ملنا چاہتا ہوں جہاں ہم کھانا کھائیں گے مگر اس دوران اپنی دلچسپی کے موضوعات پر بات بھی کریں گے۔ شاید ہماری بیگمات ہمیں زیادہ بہتر مشورے دے سکیں (قہقہہ) مگر میں امید کرتا ہوں کہ ایسا نہیں ہو گا۔ تاہم میرا خیال ہے کہ ایسا ممکن ہے۔

یہاں آنے پر ایک مرتبہ پھر شکریہ۔ ہم اس کی بے حد قدر کرتے ہیں۔ آپ سب کا بے حد شکریہ۔

سوال: کیا اسلحے پر پابندی ہونی چاہیے؟

صدر: ہم بہت جلد اس معاملے کو دیکھیں گے۔ ہم بہت جلد اس معاملے کو دیکھیں گے۔

سوال: جناب، ایران پر فیصلہ؟

صدر: آپ ایران کے بارے میں بہت جلد سنیں گے۔ شکریہ

اختتام

6:10 سہ پہر

# # #


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
ای میل کے ذریعے تازہ معلومات حاصل کریں
تازہ اطلاعات یا اپنی منتخب کردہ ترجیحات تک رسائی کے لیے مہربانی کر کے ذیل میں اپنی رابطہ معلومات درج کریں