rss

مہاجرت کے عالمی معاہدے سے امریکی دستبرداری

العربية العربية, English English, Français Français, Português Português, Русский Русский, Español Español

متحدہ
دفتر اطلاعات و عوامی سفارتکاری
برائے فوری اجرا
2 نومبر 2017

 

 

اقوام متحدہ میں امریکی مشن نے آج سیکرٹری جنرل کو آگاہ کیا ہے کہ امریکہ مہاجرت سے متعلق عالمی معاہدے کو ترک کر رہا ہے۔
امریکہ 2016 میں اس معاہدے میں شامل ہوا تھا جب اوبامہ انتظامیہ نے مہاجرت پر اقوام متحدہ کے نیویارک اعلامیے میں شرکت کا فیصلہ کیا۔ نیویارک اعلامیے کی متعدد شرائط تارکین وطن اور پناہ گزینوں سے متعلق امریکی پالیسیوں اور ٹرمپ انتظامیہ کے مہاجرت بارے اصولوں سے مطابقت نہیں رکھتیں۔ نتیجتاً صدر ٹرمپ نے فیصلہ کیا ہے کہ امریکہ اس معاہدے میں شامل نہیں رہے گا جس کا مقصد آئندہ برس اقوام متحدہ میں عالمی اتفاق رائے تک پہنچنا ہے۔
اقوام متحدہ میں امریکہ کی مستقل سفیر نکی ہیلے نے اس حوالے سے درج ذیل بیان جاری کیا ہے:
‘امریکہ کو تارکین وطن کے حوالے سے اپنے ورثے اور دنیا بھر میں مہاجرین اور پناہ گزینوں کو معاونت فراہم کرنے کے ضمن میں اخلاقی اعتبار سے اپنے طویل قائدانہ کردار پر فخر ہے۔ اس حوالے سے کسی ملک نے امریکہ سے زیادہ کام نہیں کیا اور ہمارا فیاضانہ طرزعمل جاری رہے گا۔ تاہم تارکین وطن کے حوالے سے حکمت عملی بارے ہمارے فیصلے امریکیوں اور صرف امریکیوں کو کرنا چاہئیں۔ ہم ہی فیصلہ کریں گے کہ اپنی سرحدوں کی بہتر نگرانی کیسے کرنی ہے اور کسے ہمارے ملک میں داخلے کی اجازت ہو گی۔ نیویارک اعلامیے کے حوالے سے عالمگیر طریق کار امریکی خودمختاری سے مطابقت نہیں رکھتا’۔


اصل مواد دیکھیں: https://usun.state.gov/remarks/8197
یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں