rss

شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں سفیر ہیلی کا خطاب

Español Español, English English, العربية العربية, हिन्दी हिन्दी, Português Português, Русский Русский

امریکی مشن برائے اقوام متحدہ
دفتر اطلاعات و عوامی سفارتکاری
برائے فوری اجرا
5 فروری 2018

 
 

اقوام متحدہ میں امریکہ کی مستقل نمائندہ نکی ہیلی نے شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر سلامتی کونسل کی بریفنگ سے خطاب کیا۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ:

‘آج صبح شام سے موصول ہونے والی خبر نے پریشانی کو جنم دیا ہے۔ اتوار کو کیمیائی ہتھیاروں سے ایک اور حملے کی اطلاعات ملی ہیں۔ بظاہر کلورین  گیس سے متاثرہ افراد بڑی تعداد میں ہسپتالوں میں لائے جا رہے ہیں۔ اسد حکومت کی جانب سے اپنے ہی لوگوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال سے زیادہ کوئی بات میرے ملک اور دنیا کے لیے ہولناک نہیں ہے۔ سلامتی کونسل نے کھل کر کہا ہے کہ شام کی جانب سے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال ختم ہونا چاہیے مگر یہ سلسلہ ابھی تک جاری ہے۔ ہم نے گزشتہ برس اس کونسل میں بیشتر وقت ایک ملک کو اسد حکومت کی جانب سے کیمیائی  ہتھیاروں کے استعمال پر اس کا دفاع کرتے دیکھا جس نے اسے ان واقعات کا ذمہ دار ٹھہرانے سے انکار کیا۔ تو پھر امریکی عوام کو کیا نظر آتا ہے؟ تمام ممالک کے لوگ اسے کیسے دیکھتے ہیں؟ وہ دیکھتے ہیں کہ سلامتی کونسل کارروائی کے لیے متفق نہیں ہو سکتی حالانکہ اس کونسل کا بنایا تفتیشی طریق کار اس نتیجے پر پہنچا ہے کہ اسد حکومت نے کیمیائی ہتھیار استعمال کیے تھے’

‘یہ ایک حقیقی المیہ ہے کہ شام میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال روکنے کی کوشش میں روس نے ہمیں واپس پہلے مقام پر لا کھڑا کیاہے ۔ مگر ہم اسد حکومت کی سچائی جاننے کی اپنی کوششیں ختم نہیں کریں گے اور یہ امر یقینی بنائیں گے کہ سچائی سامنے آئے اور عالمی برادری اس پر کارروائی کرے۔ یہی وجہ ہے کہ ہم نے گزشتہ ہفتے امریکی ہولوکاسٹ میوزیم میں  اس کونسل کے تمام 15 ممالک کو مدعو کیا۔ وہاں منعقدہ نمائش کا عنوان تھا ‘شام: براہ مہربانی ہمیں مت بھولیں’ ہم سب نے اسد حکومت کے مظالم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ناقابل تردید ثبوت دیکھا۔ ہم شامی عوام کو بھول سکتے ہیں اور نہ ہی ہمیں انہیں بھولنا چاہیے۔ امریکہ انہیں نہیں بھولے گا۔ اگرچہ یہ کونسل شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر تاحال حقیقی احتساب کے قابل نہیں ہوئی تاہم امریکہ اس حوالے سے اپنی ذمہ داری سے دستبردار نہیں ہو گا’ ۔

[cid:[email protected]]

خطاب کا پورا متن یہاں پڑھیے: https://go.usa.gov/xnAwk


اصل مواد دیکھیں: https://usun.state.gov/remarks/8285
یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں