rss

انعام برائے انصاف۔۔2008 کے ممبئی حملوں کی معلومات پر انعام کی پیشکش

Facebooktwittergoogle_plusmail
हिन्दी हिन्दी, English English

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
25 نومبر 2018

 

امریکی دفتر خارجہ کا ‘انعام برائے انصاف’ (آر ایف جے) پروگرام 2008 کے ممبئی حملوں کا ارتکاب، ان کی سازش یا ان حملوں کی انجام دہی میں مدد یا اعانت فراہم کرنے والے کسی بھی فرد کی کسی بھی ملک میں گرفتاری یا اسے سزا دلانے میں مددگار معلومات کی فراہمی پر 5 ملین ڈالر تک انعام دینے کی پیشکش کر رہا ہے۔

دہشت گرد گروہ لشکر طیبہ (ایل ای ٹی) سے وابستہ دس افراد نے 26 سے 29 نومبر 2008 تک انڈیا کے شہر ممبئی میں متعدد اہداف پر مربوط حملے کیے۔ ان حملوں کے نتیجے میں چھ امریکیوں سمیت 166 افراد ہلاک ہوئے۔

امریکہ 2008 کے ممبئی حملوں کے ذمہ داروں کی نشاندہی اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے اپنے عالمی شراکت کاروں کے ساتھ تعاون کے لیے پرعزم ہے۔ آج کا اعلان ممبئی حملوں کے مرتکبین سے متعلق معلومات کے حصول کی خاطر ‘آر ایف جے’ کی جانب سے انعام کی تیسری پیشکش ہے۔ اپریل 2012 میں دفتر خارجہ نے ‘ایل ای ٹی’ کے بانی حافظ محمد سعید اور دوسرے اعلیٰ سطحی رہنما حافظ عبدالرحمان مکی کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے معلومات کے بدلے انعام کی پیشکش کا اعلان کیا تھا۔

دسمبر 2001 میں دفتر خارجہ نے ‘امیگریشن اینڈ نیشنلٹی ایکٹ’ کے سیکشن 219 کی رو سے ‘ایل ای ٹی’ کو غیرملکی دہشت گرد تنظیم (ایف ٹی او) نامزد کیا تھا۔ ‘ایف ٹی او’ نامزدگیاں دہشت گردی کے خلاف ہماری جنگ میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اور یہ دہشت گردانہ سرگرمیوں کی روک تھام کے علاوہ  گروہوں پر دہشت گردی کے کام ترک کرنے کے لیے دباؤ ڈالنے کا ایک موثر ذریعہ ہیں۔ مئی 2005 میں اقوام متحدہ  کے زیراہتمام پابندیوں سے متعلق کمیٹی 1267 نے ‘ایل ای ٹی’ کو سلامتی کونسل کی پابندیوں سے متعلق منظم فہرست میں شامل کیا تھا۔

انعام کی ان پیشکشوں سے متعلق مزید معلومات ‘انعام برائے انصاف’ کی ویب سائٹ www.rewardsforjustice.net پر موجود ہیں۔ ہم اس واقعے سے متعلق معلومات رکھنے والے ہر شخص کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں کہ وہ ویب سائٹ، ای میل ([email protected])، فون (800-877-3927 برائے شمالی امریکہ) یا ڈاک (انعام برائے انصاف، واشنگٹن، ڈی۔سی، 20520-0303 امریکہ) پر رابطہ کرے۔ اس سلسلے میں اپنے قریب ترین امریکی سفارت خانے یا قونصل خانے میں علاقائی سکیورٹی افسر سے رابطہ بھی کیا جا سکتا ہے۔ تمام معلومات انتہائی اخفا میں رکھی جائیں گی۔

‘انعام برائے انصاف’ پروگرام امریکی دفتر خارجہ میں سفارتی سلامتی کی خدمات کا شعبہ چلاتا ہے۔ 1984 میں اپنے آغاز کے بعد اس پروگرام نے 100 سے زیادہ ایسے افراد کو 150 ملین ڈالر سے زیادہ رقم ادا کی ہے جنہوں نے ایسی قابل عمل معلومات فراہم کیں جن کی بدولت دہشت گردوں کے احتساب میں مدد ملی یا دنیا بھر میں عالمی دہشت گردی کے واقعات کی روک تھام ممکن ہوئی۔ اس لنک کے ذریعے ہمیں ٹویٹر پر فالو کیجیے https://twitter.com/Rewards4Justice


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں