rss

”اچھائی کی قوت: مشرق وسطیٰ میں امریکہ کا تازہ دم کردار ”وزیر خارجہ پومپئو کا قاہرہ کی امریکی یونیورسٹی میں خطاب

English English, العربية العربية, Français Français, हिन्दी हिन्दी, Русский Русский, Español Español

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
10 جنوری 2019
حقائق نامہ

 

”صدر ٹرمپ کے زیرقیادت امریکہ نے محض 24 مہینوں میں ہی اس خطے میں اچھائی کی قوت کے طور پر اپنے روایتی کردار کو ازسرنو منوا لیا ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ ہم نے اپنی غلطیوں سے سبق سیکھا ہے۔ ہم ایک مرتبہ پھر اپنی بات کہنے کے قابل ہو گئے ہیں۔ ہم نے اپنے تعلقات ازسرنو استوار کر لیے ہیں۔ ہم نے دشمنوں کی جھوٹی راگنی مسترد کر دی ہے۔”

وزیر خارجہ مائیک پومپئو، 10 جنوری، 2019

امریکہ: مشرق وسطیٰ میں اچھائی کی قوت

”جو لوگ امریکی قوت کے استعمال پر مضطرب ہیں وہ یاد رکھیں کہ: مشرق وسطیٰ میں امریکہ غاصب قوت کے بجائے ہمیشہ آزادی کی طاقت رہا ہے۔ ہم نے کبھی اپنا تسلط قائم کرنے کا خواب نہیں دیکھا۔ کیا آپ ایرانی حکومت کے بارے میں یہی بات کہہ سکتے ہیں؟

  • آج عراق میں حکومت کی دعوت پر تعینات ہمارے فوجی دستوں کی تعداد قریباً 5000 ہے جو کبھی 166000 تھے۔
  • صدر ٹرمپ نے داعش پر ماضی کے مقابلے میں کہیں زیادہ فوری اور کاری ضرب لگانے کے لیے میدان جنگ میں امریکی کمانڈروں کو بااختیار بنایا۔ داعش کے زیرقبضہ 99 فیصد علاقہ آج بازیاب کرایا جا چکا ہے اور لاکھوں عراقیوں اور شامیوں کی زندگی معمول پر آ رہی ہے۔
  • 2014 سے اب تک امریکہ عراق کو انسانی امداد کی مد میں 5 ارب ڈالر مہیا کر چکا ہے۔ گزشتہ برس کویت میں ہونے والی تعمیرنو کانفرنس کے دوران عراق کی تعمیرنو کے لیے اتحادیوں کے ساتھ مل کر امداد اور مالیات کی مد میں قریباً 30 ارب ڈالر کا انتظام کیا گیا۔

بنیاد پرست اسلامی دہشت گردی کا اکٹھے مقابلہ

”ہم مشرق وسطیٰ میں امن کے خواہاں ہر ملک سے کہتے ہیں کہ وہ اسلامی انتہاپسندی کو شکست دینے کے لیے نئی ذمہ داریوں میں حصہ بٹائے۔”

وزیر خارجہ پومپئو، 10 جنوری 2019

  • صدر ٹرمپ نے بیرون ملک اپنے پہلے دورے میں مسلم اکثریتی ممالک سے کہا تھا کہ وہ ”انتہاپسندی پر فتح پانے اور دہشت گردی کی قوتوں کو مغلوب کرنے کے عظیم تاریخی امتحان کا سامنا کریں۔”
  • امریکہ بنیاد پرست اسلامی دہشت گردی کی بدنما حقیقت کا مقابلہ جاری رکھے گا۔ ٹرمپ انتظامیہ اپنے اتحادیوں اور شراکت داروں سے کہہ رہی ہے کہ وہ اس مشترکہ خطرے سے نمٹنے کے لیے مزید اقدامات اٹھائیں۔
  • امریکہ نے دولت اسلامیہ کی خلافت کو منہدم کرنے کے لیے اتحادیوں اور شراکت داروں کے اتحاد کو مضبوط بنایا۔ کبھی داعش کے زیرقبضہ 99 فیصد علاقہ اب آزاد ہو چکا ہے۔
  • امریکہ انسداد دہشت گردی میں بدستور ایک ثابت قدم شراکت دار رہے گا۔اہداف سامنے آنے کی صورت میں خطے میں  ہمارے فضائی حملے جاری رہیں گے۔ ہم داعش کو شکست دینے کے لیے قائم اتحاد میں اپنے شراکت داروں کے ساتھ کام کرتے رہیں گے۔ ہم مشرق وسطیٰ اور دنیا بھر میں محفوظ پناہ گاہوں کے متلاشی دہشت گردوں کا پیچھا کر کے انہیں نشانہ بناتے رہیں گے۔
  • امریکہ سرحدوں کی حفاظت، دہشت گردوں کے خلاف کارروائی، مسافروں کی جانچ پڑتال، پناہ گزینوں کی معاونت اور دیگر امور میں اپنے شراکت داروں کی مدد جاری رکھے گا۔

ایرانی حکومت اور اس کے آلہ کاروں کی مخالفت

”اگر ایران کی انقلابی حکومت نے اپنی موجودہ روش  جاری رکھی تو مشرق وسطیٰ کے ممالک سلامتی، معاشی استحکام اور اپنے عوام کے خوابوں کی تکمیل ممکن نہیں بنا پائیں گے۔”

وزیر خارجہ پومپئو، 10 جنوری 2019

  • ٹرمپ انتظامیہ ایرانی حکومت کی جانب سے خطے اور دنیا بھر میں تباہی اور عدم استحکام پیدا کرنے کی مہمات کا مقابلہ کر رہی ہے۔
  • امریکہ نے ایرانی حکومت کے خلاف تاریخ کی کڑی ترین پابندیاں عائد کی ہیں اور اگر ایرانی حکومت نے امریکہ اور عالمی برادری کے لیے خطرات کا باعث بننے والی اپنی پالیسیاں تبدیل نہ کیں تو ان پابندیوں میں مزید سختی لائی جائے گی۔ وزیر خارجہ پومپئو نے مئی میں 12 ایسے مطالبات کا خاکہ پیش کیا تھا جو کسی بھی عام ملک کے لیے قابل عمل ہونے چاہئیں۔ جواباً امریکہ دونوں ممالک میں تعلقات کا نیا باب کھولنے کے لیے تیار ہے۔
  • امریکہ ایران اور اس کے آلہ کاروں کی جانب سے عراق، لبنان، شام، یمن اور کہیں بھی ضرررساں سرگرمیوں کو روکنے کے لیے خطے اور دیگر جگہوں پر اپنے شراکت داروں کے ساتھ کام کر رہا ہے۔
  • 11 فروری کو اس ظالم حکومت کو برسراقتدار آئے 40 برس ہو جائیں گے۔ ٹرمپ انتظامیہ ایرانی عوام کے ساتھ ہے جو نئی آزادیوں اور احتساب کا مطالبہ کر رہے ہیں جو ان کا استحقاق ہے۔

دیرینہ اتحادوں کی مضبوطی اور نئی شراکتوں کا قیام

”مشترکہ خطرات کی موجودگی میں سلامتی کی صورتحال مزید بہتر بنانے کے لیے تجدید تعلقات کی جانب یہ اقدامات ضروری ہیں۔ یہ خطے کے روشن مستقبل کا اشارہ ہیں۔”

وزیر خارجہ پومپئو، 10 جنوری 2019

  • ٹرمپ انتظامیہ امریکی اتحادوں کو مضبوط بنا رہی ہے اور مشرق وسطیٰ کے ممالک کو اپنی مشترکہ سلامتی اور خوشحالی کے لیے مل کر کام کرنے کی غرض سے اکٹھا کرنے میں مصروف ہے۔
  • امریکہ یہ امر یقینی بناتا رہے گا کہ ہمارے اتحادی اسرائیل کے پاس اپنا دفاع بشمول ایرانی حکومت کی جارحانہ مہم جوئی کا مقابلہ کرنے کی خاطرخواہ عسکری اہلیت ہو۔
  • ٹرمپ انتظامیہ مشرق وسطیٰ کے ممالک میں نئے سفارتی و معاشی تعلقات کو پروان چڑھا رہی ہے جن کا اب تک تصور بھی نہیں کیا گیا تھا۔
  • امریکہ خطے کو درپیش انتہائی سنگین خطرات کا مقابلہ کرنے اور توانائی و معیشت کے شعبوں میں تعاون مضبوط بنانے کے لیے ‘مشرق وسطیٰ کا تزویراتی اتحاد’ قائم کرنے کے لیے کام کر رہا ہے۔

یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں