rss

وزیر خارجہ مائیکل آر پومپئو کا دنیا بھر کی باہمت خواتین (آئی ڈبلیو او سی) کو اعزازات دینے کی تقریب سے خطاب

Español Español, English English, Français Français, हिन्दी हिन्दी, Português Português, Русский Русский

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
7 مارچ 2019
ڈین ایچیسن آڈیٹوریم
واشنگٹن، ڈی سی

 

وزیر پومپئو: شکریہ۔ شکریہ پام۔ سبھی کو صبح بخیر۔ دنیا بھر کی باہمت خواتین کے لیے تقریب اعزازت کی پہلی مرتبہ میزبانی کرنا میرے لیے واقعتاً ایک اعزاز ہے اور مجھے خوشی ہے کہ اعزاز یافتگان کے اس غیرمعمولی گروہ کے ساتھ اظہار مسرت کے لیے آپ سب لوگ یہاں موجود ہیں۔

گزشتہ برس اسی وقت ایران بھر میں بہت سی خواتین عوامی مقامات پر ہمہ وقت حجاب اوڑھنے کی پابندی سے متعلق قانون کے خلاف احتجاج کے لیے سڑکوں پر نکلیں۔ اپنی آزادی کے اظہار کے طور پر ان باہمت خواتین نے کیمروں کے سامنے اپنے حجاب اتار دیے اور ان کے چہرے صاف نظر آتے تھے۔ انہوں نے اپنے رہنماؤں کی سنگدلی سے آگاہ ہوتے ہوئے بھی یہ سب کچھ کیا۔ یقینی طور پر ایک سال پہلے کل کے دن یعنی خواتین کے عالمی دن پر ریاستی پولیس نے ان کے احتجاج پر چڑھائی کر دی۔ بہت سی خواتین کو گرفتار کر لیا گیا۔ بعض نے جیل میں تشدد اور مارپیٹ کا سامنا کیا۔ ان میں کم از کم ایک کو 20 سال قید کی سزا دی گئی اور دیگر کو بیرون ملک فرار پر مجبور ہونا پڑا۔ ان ایرانی خواتین کی حالت زار بہت سی خواتین کو درپیش  خطرے اور اس کے سامنے متعدد بار ان کی جانب سے دکھائی گئی ہمت کی صرف ایک مثال ہے۔

آج ہم دنیا بھر کی باہمت خواتین کی تکریم کے لیے یہاں موجود ہیں جو غیرمعمولی آزمائش میں ثابت قدم کھڑی ہیں۔ اس برس یہ اعزاز حاصل کرنے والوں میں الشباب کے بہت سے دہشت گردوں کو پکڑنے والی جبوتی کی انسداد دہشت گردی کے شعبے سے تعلق رکھنے والی تفتیش کار، روہنگیا عورتوں اور لڑکیوں کی خریدوفروخت کے خلاف جدوجہد کرنے والی  ایک بنگلہ دیشی روہنگیا وکیل، بدعنوانی اور منظم جرائم کا انکشاف کرنے پر متعدد بار حملوں کا سامنا کرنے اور بدستور کام میں جتی مونٹی نیگرو کی تحقیقاتی صحافی، عورتوں اور لڑکیوں کے انسانی حقوق اور سرکاری عہدوں پر زیادہ سے زیادہ خواتین کی تقرری کے لیے جدوجہد کرنے والی تنزانیہ کی وکیل، جنوبی سوڈان میں لڑکیوں کے لیے بورڈنگ سکول کھولنے اور انہیں ناخواندگی اور کم عمری کی شادیوں سے بچانے والی آئرلینڈ کی نن، اردن میں گھریلو تشدد اور جنسی زیادتی کی متاثرین کے لیے کام کے حوالے سے جانی جانے والی محکمہ پولیس کی خاتون سربراہ، مصر میں انتہائی غریب شہری کچی آبادیوں اور دیہات میں خدمات انجام دینے والی قومی این جی او کی رہنما، برما میں عشروں سے جاری خانہ جنگی میں بے گھر ہونے والے نسلی گروہوں کے لیے عمر بھر کام کرنے والی کارکن، سری لنکا میں بچوں کے استحصال کے خلاف لڑنے اور جرائم سے متاثرہ بچوں کے لیے مفت قانونی خدمات مہیا کرنے والی خاتون اور آخر میں پیرو میں تحفظ ماحول کے وکلا کی قومی رابطہ کار شامل ہیں جنہوں نے بدعنوانی، انسانی خریدوفروخت اور امیزون میں  قدرتی وسائل کی تباہی میں ملوث اربوں ڈالر کا دھندا کرنے والے جرائم کے کاروباروں کے خلاف جدوجہد کی۔

براہ مہربانی تالیوں میں میرا ساتھ دیجیے۔ (تالیاں)

اس موقع پر یہ بات بھی اہم ہے کہ ہم ان خواتین کو یاد کریں جنہوں نے اپنی باہمت کوششوں کی بھاری قیمت ادا کی۔ ان میں یوکرائن کی کیترینا ہینڈزیوک جیسی عورتیں شامل ہیں جس نے اپنا صحافتی کیریئر بدعنوانی کو سامنے لانے اور اس کے خلاف آواز اٹھانے کے لیے وقف کر دیا۔ تیزاب سے وحشیانہ حملے کے بعد بھی کیٹرینا نے خاموش رہنے سے انکار کیا۔ اس حملے سے تین ماہ بعد ان کی موت ہو گئی۔ انہوں نے ہسپتال میں بستر پر ہوتے ہوئے انصاف کا مطالبہ کیا اور اپنے ساتھی شہریوں کے  لیے زبردست مثال قائم کی۔

یہاں دفتر خارجہ میں ایسی داستانیں ہمیں تحریک دیتی اور متاثر کرتی ہیں۔ خواتین سے متعلق عالمگیر امور کے دفتر میں ہمارے  ساتھی خواتین کے اختیار کو ہماری خارجہ پالیسی سے جوڑنے کے لیے کام کرتے ہیں اور تعلیمی و ثقافتی امور سے متعلق ہمارا دفتر دنیا بھر میں لڑکیوں اور خواتین کے لیے جامع اور معیاری تعلیم کی فراہمی میں معاونت کرتا ہے۔ یوایس ایڈ میں ہم ایک نئے منصوبے پر کام کر رہے ہیں جس کا مقصد ترقی پذیر ممالک میں کم از کم 50 ملین خواتین کو بااختیار بنانا ہے۔ اسے خواتین کی عالمگیر ترقی و خوشحالی کے اقدام کا نام دیا گیا ہے۔ ہمیں دفتر خارجہ میں ان کوششوں پر بے حد فخر ہے مگر ہمیں اندازہ ہے کہ دنیا بھر میں ہر شعبہ ہائے زندگی میں خواتین کی شرکت یقینی بنانے کے لیے مزید کام ہونا باقی ہے۔

باہمت خواتین ہر جگہ موجود ہیں۔ ان میں بیشتر کو کبھی سراہا نہیں جائے گا۔ انہیں مختلف مسائل کا سامنا ہوتا ہے۔ مجھے ذاتی طور پر بھی اس کا تجربہ ہوا۔ میں نے فوج میں اپنی ملازمت کے دوران خواتین کو کام کرتے دیکھا اور اپنی نجی زندگی میں بھی  ان سے تحریک پائی۔ میری والدہ بھی باہمت خاتون تھیں۔ انہوں نے دیہی کنساس میں جنم لیا تھا۔ وہ تین  بچوں کو پالتے ہوئے روزی روٹی کا بندوبست کرتی تھیں۔ وہ کبھی کالج نہیں گئی تھیں مگر انہوں نے یقینی بنایا کہ ہم میں سے ہر ایک کو بھرپور موقع ملے۔ آپ سبھی ایسی خواتین کو جانتے ہیں۔ یہ مضبوط عورتیں ہیں۔ انہوں نے خود کو مجھے اور میرے بہن بھائی کو مواقع دینے کے لیے وقف کر دیا اور ہم نے ان کی دی گئی قربانیوں کی ستائش نہیں کی۔ انہوں نے مجھے واقعی تیز فہم اور ہوشیار بنایا۔ مجھے ایک اور باہمت خاتون بھی ملی۔ یہ میری اہلیہ سوسن ہیں جو آج میرے ساتھ یہاں موجود ہیں۔ (قہقہہ اور تالیاں)

ہم سبھی جانتے ہیں، میں اپنی زندگی کے تجربے کی بدولت آگاہ ہوں کہ باہمت خواتین ہر جگہ موجود ہیں اور ہر جگہ ان کی ضرورت ہے۔ یہی واحد وجہ ہے کہ مجھے یہاں کام کا اعزاز حاصل ہوا تو میں نے قیادت کی اعلیٰ ذمہ داریوں پر درجنوں خواتین کا تقرر کیا۔ نائب وزرا سے معاون وزرا اور نان کیریئر سفارتوں تک ہم جانتے ہیں کہ دنیا بھر میں خواتین کو بااختیار بنائے جانے تک ہم کامیاب نہیں ہو سکتے اور اس کا مطلب یہ ہے کہ ہمیں یہ امر یقینی بنانے کی ضرورت ہے کہ دنیا بھر میں ہمارے محکمے میں خواتین بااختیار ہوں۔

آج ہماری ممتاز مہمان مقرر کو خوش آمدید کہنا میرے لیے اعزاز ہے۔ یہ غیرمعمولی قوت اور ہمت کی حامل خاتون ہیں۔ یہ خاتون اپنے بل بوتے پر طاقتور آواز کی حامل ہوئی ہیں۔ خاتون اول بننے کے بعد انہوں نے انسانی خریدوفروخت اور دنیا بھر میں عورتوں اور لڑکیوں سے جنسی زیادتی کے خلاف زوردار آواز اٹھائی۔ میں جانتا ہوں کہ وہ بدستور ایک پراثر رہنما اور ایسی پراثر آواز رہیں گی  جن سے مستقبل میں دنیا بھر میں انہی جیسی خواتین رہنماؤں کو تحریک ملے گی۔ براہ مہربانی امریکی خاتون اول میلانیا ٹرمپ کے استقبال میں میرا ساتھ دیجیے۔ (تالیاں)


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں