rss

دہشت گردی کی عالمگیر مہم پر صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ کی ایرانی حکومت سے بازپرس

Русский Русский, English English, العربية العربية, Français Français, Português Português, Español Español, हिन्दी हिन्दी

وائٹ ہاؤس
دفتر برائے سیکرٹری اطلاعات
برائے فوری اجرا
8 اپریل 2019
دہشت گردی کی عالمگیر مہم پر صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ کی ایرانی حکومت سے بازپرس

 
 

”ایرانی حکومت ریاستی سطح پر دہشت گردی کی سب سے بڑی معاون ہے۔ یہ خطرناک میزائل برآمد کرتی ہے، مشرق وسطیٰ بھر میں جنگوں کی آگ بھڑکاتی ہے اور دہشت گرد آلہ کاروں کی مدد کرتی ہے۔” ۔۔۔ صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ

زیادہ سے زیادہ دباؤ میں اضافہ: صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ ایران کی جانب سے دنیا بھر میں دہشت گردی کی مہم انجام دینے والے بنیادی ادارے کو ہدف بنا کر ایرانی حکومت سے بازپرس کر رہے ہیں۔

  • امریکی انتظامیہ ایران کی جانب سے دہشت گردی کی عالمگیر مہم کا مقابلہ کرنے کے لیے پاسداران انقلاب اسلامی (آئی آئی جی سی) کو غیرملکی دہشت گرد تنظیم کے طور پر نامزد کر رہی ہے۔
  • ٹرمپ انتظامیہ دنیا بھر میں ایرانی پشت پناہی سے ہونے والی دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کی وسیع تر کوشش کے طور پر یہ بے مثل قدم اٹھا رہی ہے۔
  • امریکی انتظامیہ کے اس اقدام سے ایران پر مالیاتی دباؤ اور اس کی تنہائی میں اضافہ ہو گا اور وہ دہشت گردی کی سرگرمیوں کے لیے استعمال ہونے والے وسائل سے محروم ہو جائے گی۔
  • اس اقدام سے دیگر حکومتوں اور نجی شعبے کو پاسداران انقلاب کی ماہیت سے آگاہی میں مدد ملے گی جو دہشت گردی کی مالی معاونت کے لیے دنیا بھر میں جعلی کمپنیاں اور ادارے چلاتا ہے۔
  • بظاہر جائز کاروباری سودوں سے حاصل ہونے والا منافع ایرانی حکومت کے دہشت گرد ایجنڈے کی مدد میں استعمال ہو سکتا ہے۔
  • یہ پہلا موقع ہے جب امریکہ نے کسی حکومت کے ایک حصے کو ‘ایف ٹی او’ کے طور پر نامزد کیا ہے۔
  • اس نامزدگی سے یہ واضح ہوتا ہے کہ ایرانی حکومت کی جانب سے دہشت گردی کا استعمال اسے کسی بھی دوسرے حکومت سے بنیادی طور پر ممیز کرتا ہے۔

ایران کی جانب سے جاری دہشت گردی کی عالمگیر مہم کا مقابلہ: ایرانی حکومت دنیا بھر میں دہشت گردی کی مہم میں ملوث ہے۔

  • ایرانی حکومت دہشت گردی کو اپنی ریاست کاری کے مرکزی ذریعے کے طور پر استعمال کرتی ہے اور عالمی سطح پر دہشت گردی کی مہم کی رہنمائی اور اس کی انجام دہی کے لیے پاسداران انقلاب سے کام لیتی ہے۔
  • پاسداران انقلاب دہشت گرد گروہوں کو مالی معاونت، اسلحہ، تربیت اور انصرامی مدد فراہم کرتا ہے۔
  • پاسداران انقلاب متعدد ممالک میں دہشت گردی کے منصوبوں میں براہ راست ملوث رہا ہے۔
  • 2011 میں پاسداران انقلاب کی قدس فورس نے امریکہ میں سعودی سفیر پر واشنگٹن ڈی سی میں دیدہ دلیری سے حملے کی منصوبہ بندی کی جسے سامنے لا کر ناکام بنا دیا گیا۔
  • جرمنی، بوسنیا، بلغاریہ، کینیا، بحرین، ترکی اور دیگر ممالک میں پاسداران انقلاب قدس فورس کی سرگرمی کا پتا چلا کر اسے ناکام بنایا جا چکا ہے۔
  • ایرانی حکومت بدستور دنیا بھر میں ریاستی سطح پر دہشت گردی کی سب سے بڑی معاون ہے جو ہر سال دہشت گردی کی کارروائیوں میں مدد کے لیے قریباً ایک ارب ڈالر خرچ کرتی ہے۔
  • یہ حکومت متعدد دہشت گرد گروہوں کی مالی مدد کرتی ہے جن میں حزب اللہ، حماس، فلسطینی اسلامی جہاد، کتائب حزب اللہ، الاشتر بریگیڈز اور دیگر شامل ہیں۔

امریکی سلامتی کا تحفظ: صدر ٹرمپ نے ایرانی حکومت کی تمام ضرررساں سرگرمیوں سے نمٹنے اور یہ امر یقینی بنانے کے لیے عملی قدم اٹھایا ہے کہ یہ کبھی جوہری ہتھیار حاصل نہ کرنے پائے۔

  • صدر ٹرمپ نے ناقابل قبول ایرانی معاہدے سے دستبرداری اختیار کی جو امریکی قومی سلامتی کے مفادات کو تحفظ دینے میں  ناکام تھا۔
  • صدر ٹرمپ نے ایران پر وہ تمام پابندیاں دوبارہ عائد کیں جو ایرانی معاہدے کے تحت اٹھا لی گئی تھیں اور ایران کے خلاف اب تک کی کڑی ترین پابندیاں نافذ کیں۔
  • ان پابندیوں سے اس آمدنی کو روکنے میں مدد ملتی ہے جنہیں ایرانی حکومت دہشت گردی کی مالی اعانت، عالمی سطح پر عدم استحکام کے فروغ، جوہری اور بلسٹک میزائل پروگراموں کی مالی معاونت اور اپنے رہنماؤں کی جیبیں بھرنے کے لیے استعمال کرتی ہے۔
  • امریکی انتظامیہ نے اپنے اقدامات کو ایرانی حکومت کے خلاف قرار دیا ہے۔ یہ اقدامات اس حکومت کے دیرینہ متاثرین ایرانی عوام کے خلاف نہیں ہیں۔

یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں