rss

ذوالحج منان کے قتل کو تین سال ہونے پر یوایس ایڈ کے منتظم مارک گرین کا بیان

English English, हिन्दी हिन्दी

امریکی ادارہ برائے عالمی ترقی
دفتر تعلقات عامہ
برائے فوری اجرا
25 اپریل 2019


انسانی حقوق کے پرجوش حامی اور ڈھاکہ میں امریکی سفارت خانے کے مخلص اہلکار ذوالحج منان 25 اپریل 2016 کو دہشت گردوں کے ہاتھوں قتل بہیمانہ طور سے قتل ہوئے۔ ان دہشت گردوں نے نفرت کا جو راستہ اختیار کیا وہ بنگلہ دیش کے لیے اجنبی  تھااور بنگلہ دیشی عوام کی گرمجوشی اور دوستانہ رویے سے متضاد میل نہیں کھاتا۔ ذوالحج نے امریکی سفارت خانے کے لیے نو برس تک پروٹوکول سپیشلسٹ کے طور پر کام کرنے کے بعد 2015 میں امریکی ادارہ برائے عالمی ترقی میں جمہوریت اور حکمرانی سے متعلق شعبے میں شمولیت اختیار کی تھی۔

ان کی موت کو تین سال مکمل ہونے پر ہم ذوالحج کو انسانی حقوق کی حمایت میں ان کی خدمات اور بنگلہ دیش و دنیا بھر میں تنوع، مساوات اور تمام لوگوں کے لیے قبولیت کے جذبے کے لیے یاد کرتے ہیں۔ ہم بنگلہ دیشی حکام سے ایک مرتبہ پھر یہ  مطالبہ بھی کرتے ہیں کہ وہ اس وحشیانہ جرم کے ذمہ داروں کے خلاف قانونی کارروائی کریں اور مزید تاخیر کے بغیر ان کا احتساب ممکن بنائیں۔

یوایس ایڈ اور امریکی حکومت کے تمام شعبہ جات میں ہم تنوع اور تمام لوگوں کی منفرد خدمات کی قدر کرتے ہیں۔ ہم یہ بھی جانتے ہیں کہ کوئی جمہوریت اس وقت تک عوام کی حقیقی نمائندہ نہیں ہو سکتی جب تک اس میں سبھی کی آواز نہ سنی جائے۔ اس برس یوایس ایڈ فخریہ طور پر اپنا پہلا سالانہ ”ذوالحج منان جامع ترقی اعزاز” یوایس ایڈ کے ایسے اہلکار کو دے گی جو یوایس ایڈ کی ترقیاتی کوششوں میں پسماندہ آبادی کی شمولیت کے حوالے سے وابستگی کا مظاہرہ کرے گا۔ ہمیں ذوالحج منان کی قدرافزائی کرتے ہوئے فخر ہے اور ہم تمام لوگوں کے انسانی حقوق کے لیے جدوجہد جاری رکھیں گے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں