rss

مہاجرین کے عالمی دن پر وزیر خارجہ پومپئو کا بیان

Español Español, English English, العربية العربية, Français Français, Português Português, Русский Русский, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
20 جون 2019


 

مہاجرین کے عالمی دن پر ہمیں ان لاکھوں پناہ گزینوں کی حالت زار کا احساس ہے جنہوں نے جنگ اور ظلم و ستم کے سبب اپنا گھربار چھوڑا ہے۔ ہم ان انتہائی کمزور لوگوں کی زندگی کے تحفظ کے لیے معاونت کی فراہمی کے عزم کی ازسرنو توثیق کرتے ہیں۔ اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین کے مطابق دنیا بھر میں جبری بے گھر کیے جانے والوں کی تعداد 70 ملین سے زیادہ ہو گئی ہے جو ایسے لوگوں کی اب تک سب سے بڑی تعداد ہے۔ شام سے افغانستان اور جنوبی سوڈان تک یہ صورتحال نمایاں ہے۔ آج دنیا میں مہاجرین کی نصف سے زیادہ تعداد کا تعلق انہی ممالک سے ہے۔ دنیا میں بے گھری کے اعتبار سے آج دوسرا بڑا بحران وینزویلا میں ہے جہاں چار ملین لوگوں کو اپنا گھر بار اور ملک چھوڑنا پڑا ہے۔ یوں مہاجرت کے مسائل پر موثر، کارگر اور جامع انداز میں ردعمل کی اہمیت نمایاں ہوتی ہے۔

امریکہ کو دنیا بھر میں انسانی امداد کے حوالے سے واحد سب سے بڑا عطیہ دہندہ ہونے پر فخر ہے۔ ہم بے گھر لوگوں کو ہرممکن حد تک ان کے اپنے علاقوں کے  قریب معاونت فراہم کرتے ہیں تاکہ گھروں کو بحفاظت اور رضاکارانہ واپسی تک ان کی ضروریات پوری کرنے میں مدد دی جا سکے۔ مالی سال 2018 میں ہم نے انسانی امداد کی مد میں 8 بلین ڈالر سے زیادہ رقم دی جس میں کروڑوں مہاجرین کی مدد کے لیے فراہم کیے جانے والے مالی وسائل بھی شامل ہیں۔ امریکی مالی معاونت زندگیوں کا تحفظ ممکن بنانے کے ساتھ بحالی کی بنیاد فراہم کرتی اور خودانحصاری کی تجدید میں مدد دیتی ہے۔ اس مقصد کے لیے ایسے پروگراموں سے مدد لی جاتی ہے جو ہنگامی حالات میں خوراک، پانی، طبی معاونت، پناہ، ہنر، تعلیم اور مزید بہت کچھ مہیا کرتے ہیں۔ جب ہم مہاجرین کو مقامی معیشتوں میں متحرک طور سے کردار ادا کرنے کے قابل بناتے  ہیں تو اس سے مہاجرین، ان کے میزبانوں اور ان ممالک کے طویل مدتی استحکام میں مدد ملتی ہے جہاں ان مہاجروں نے بالاآخر واپس جانا اور حالات بہتر ہونے پر زندگی دوبارہ شروع کرنا ہوتی ہے۔

زیادہ سے زیادہ لوگوں کی مدد کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ پہلے ان جنگوں کے خاتمے کے لیے کام کیا جائے جو مہاجرت کا سبب بنتی ہیں، غیرملکی امداد کو موثر طور سے استعمال کیا جائے اور اتحادیوں و شراکت داروں کے تعاون سے بوجھ بانٹا جائے۔ ہم دیگر عطیہ دہندگان بشمول نجی شعبے سے کہتے ہیں کہ وہ ان فوری ضروریات سے نمٹنے کے لیے مزید وسائل فراہم کرے۔ ہم قومی حکومتوں سے لے کر مقامی لوگوں تک مہاجرین کی مدد کے لیے اہم کردار ادا کرنے والوں کی ستائش کرتے ہیں۔ انہوں نے ایسے حالات میں بھی مہاجرین کی معاونت کی ہے جب ان کے اپنے وسائل پہلے ہی محدود تھے۔ ہم  بڑھتے ہوئے مسائل کا حل ڈھونڈنے کے لیے مہاجرین کی میزبانی کرنے والے تمام ممالک کے ساتھ ملک کر کام کرتے رہیں گے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں