rss

مذہبی آزادی کے فروغ کے لیے وزارتی اجلاس

English English, العربية العربية, Español Español, Português Português, Русский Русский, Français Français, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
مذہبی آزادی کے فروغ کے لیے وزارتی اجلاس
ایران کے بارے میں بیان
18 جولائی 2019

 

مذہب یا اعتقاد کی بنیادی آزادی کی قدر کرنے اور اس کے تحفظ کی خواہاں عالمی برادری کے نمائندوں کی حیثیت سے ہم ایرانی حکومت کی جانب سے مذہبی آزادی کی سخت ہتک اور خلاف ورزی کی کڑی مخالفت کرتے ہیں۔

ایران میں توہین مذہب، ترک اسلام اور مسلمانوں کے مذہب کی تبدیلی ایسے جرائم ہیں جن کی سزا موت ہے۔ بہت سے ایرانی عظیم تہرانی اصلاحی قید خانے اور ایون جیل میں سڑ رہے ہیں جنہیں محض عبادت، مذہبی رسومات پر عمل کرنے اور اپنے عقائد کی تعلیم دینے جیسی بنیادی آزادی سے کام لینے کی پاداش میں یہ سب کچھ سہنا پڑ رہا ہے۔

ایران میں غیرتسلیم شدہ مذہبی اقلیتوں خصوصاً بہائی اور مسیحیت اختیار کرنے والوں کو امتیازی سلوک، ابتلا اور ناجائز قید کا سامنا ہے۔ ایرانی حکومت باقاعدگی سے بہائی مخالف بات کرتی ہے، بہائیوں کے کاروبار بند کیے جاتے ہیں اور بہائیوں کو تعلیم تک رسائی سے محروم رکھا جاتا ہے۔ ایران میں بہت سے بہائیوں کو گمراہ کن الزامات میں قید رکھا گیا ہے۔ سکیورٹی کے محکمے گھروں میں قائم گرجاگھروں پر باقاعدگی سے چھاپے مارتے ہیں اور مذہبی اقلیتوں کے ارکان سے تفتیش کرتے ہیں۔ ماشااللہ احمد زادے اور انقلابی عدالت کے دیگر ججوں نے مسیحی پادری یوسف نادرخانی اور وکٹر بیٹ تمراز سمیت مذہبی اقلیتوں کے ارکان کو قید کی سخت سزائیں دی ہیں۔ ان کے خلاف پرامن مذہبی سرگرمیوں سے متعلق بناوٹی الزامات عائد کیے گئے ہیں۔ گزشتہ برس ایرانی حکومت نے 200 سے زیادہ گونابادی صوفیوں کو طویل مدتی قید اور دیگر کڑی سزائیں دیں۔ یہ کارروائی گونابادی صوفیوں کی جانب سے اپنے ایک ہم عقیدہ شخص کی قید کے خلاف پرامن احتجاج پر سکیورٹی فورسز کے کریک ڈاؤن کے بعد ہوئی۔

ہم ایرانی حکومت سے کہتے ہیں کہ وہ ضمیر کے تمام قیدیوں کو رہا کرے اور ان پر مذہبی آزادی کے عالمگیر انسانی حق سے متضاد تمام الزامات ختم کیے جائیں۔ ہم ایران پر زور دیتے ہیں کہ وہ انسانی حقوق سے متعلق اپنی ذمہ داریوں کا پاس کرتے ہوئے منصفانہ قانونی کارروائی یقینی بنائے اور تمام قیدیوں کو طبی نگہداشت فراہم کی جائے۔ ہم تمام عقائد سے تعلق رکھنے والے ایرانیوں کے ساتھ ہیں اور امید کرتے ہیں کہ بہت جلد وہ دن آئے گا جب وہ پرامن طور سے اپنے ضمیر کی آواز پر لبیک کہنے کو آزاد ہوں گے۔

شریک دستخطی: یوکرائن، کوسوو، جزائر مارشل، متحدہ عرب امارات، ریاستہائے متحدہ امریکہ


اصل مواد دیکھیں: https://www.state.gov/statement-on-iran/
یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں