rss

جرائم کی عالمی عدالت سے متعلق امریکی پالیسی برقرار

العربية العربية, English English, Français Français, Русский Русский

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
9 اکتوبر 2019

 

اپریل میں جرائم کی عالمی عدالت (آئی سی سی) نے افغانستان کے حوالے سے ایک تفتیش شروع کرنے کے لیے عدالتی وکیل کی درخواست واضح طور سے مسترد کر دی تھی جس میں امریکی اہلکاروں کے خلاف الزامات بھی شامل تھے۔ حال ہی میں آئی سی سی کے وکیل نے ججوں سے اس استرداد کے خلاف اپیل کی اجازت چاہی تھی۔ 17 ستمبر کو عدالت نے وکیل کی درخواست جزوی طور پر منظور کرتے ہوئے محدود اپیل کی اجازت دی۔ گزشتہ ہفتے آئی سی سی کے وکیل نے اپریل میں آنے والے  فیصلے پر اپیل کے لیے مقدمے کی یادداشت جمع کرائی۔ اس دوران عدالت کا پہلا فیصلہ اپنی جگہ موجود ہے جس میں افغانستان کے حوالے سے تفتیش کو مسترد کیا گیا ہے۔

امریکہ اپنے اہلکاروں کو آئی سی سی کی کج فہم کوششوں سے تحفظ فراہم کرنے میں پرعزم ہے جو چند عناصر نے دکھاوے کے طور پر شروع کر رکھی ہیں۔ 12 اپریل کو ججوں نے وکیل کی جانب سے امریکی اہلکاروں کے خلاف تفتیش شروع کرنے کی شرمناک درخواست مسترد کر کے درست فیصلہ دیا تھا اور ہمارے لیے اس  فیصلے کے خلاف اپیل کا عمل بے معنی ہے۔ امریکہ آئی سی سی کے روم ضوابط میں فریق نہیں ہے اور اس نے امریکی اہلکاروں پر آئی سی سی کے فیصلے کے اطلاق کی تمام کوششوں پر اپنے واضح اعتراضات کو لے کر تسلسل سے آواز اٹھائی ہے۔ آئی سی سی کی جانب سے امریکی اہلکاروں کے خلاف تفتیش بلا جواز اور بلا اختیار ہو گی اور آئی سی سی کی جانب سے اس کیس کو دوبارہ کھونے کی کوئی بھی کوشش وقت اور وسائل کا ضیاع ہو گی۔ جب ججوں نے اپنے فیصلے میں یہ لکھا کہ ایسی تفتیش کی ناکامی طے ہے تو وہ یہ حقیقت جانتے تھے۔

جیسا کہ اس سے پہلے بھی  کہا گیا ہے،  امریکہ اپنی خودمختاری کے دفاع اور امریکی و اتحادی اہلکاروں کو آئی سی سی کی بلاجواز تفتیش اور قانونی عمل سے تحفظ دلانے کے لیے تمام ضروری اقدامات اٹھائے گا۔ 15 مارچ کو ہم نے اپنی پالیسی کا اعلان کیا تھا جس میں آئی سی سی کے ایسے تمام حکام کو امریکی ویزوں کے اجرا پر پابندی عائد کی گئی تھی جو امریکی اہلکاروں یا ہمارے اتحادیوں کی رضامندی کے بغیر اتحادی اہلکاروں کے خلاف آئی سی سی کی تفتیش کے براہ راست ذمہ دار ہوں۔ ہم اس پالیسی کے اطلاق کے سلسلے میں بدستور مستعد  رہیں گے۔

امریکہ  ان ممالک کے فیصلے کا احترام کرتا ہے جنہوں نے آئی سی سی کی رکنیت اختیار کی ہے اور جواباً ہم توقع رکھتے ہیں کہ عدالت کی رکنیت نہ لینے اور اپنے لوگوں کو عدالتی دائرہ اختیار میں نہ لانے کے ہمارے فیصلے کا بھی احترام کیا جائے گا۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں