rss

فائیو جی سکیورٹی حیرت انگیز مستقبل، اچھا خاصا خطرہ

Русский Русский, English English, العربية العربية, Français Français, Português Português, Español Español

وائرلیس ٹکنالوجی کی ففتھ جنریشن (فائیو جی) یا پانچویں نسل مستقبل کی معاشی ترقی اور عوامی خدمات میں ریڑھ کی ہڈی ثابت ہوگی۔ نئے نیٹ ورکوں سے جڑی سوسائٹیوں کا کلی انحصار اختراع سے بھرپور نئی اپلی کیشنوں پر ہوگا۔ تمام ممالک کو ہر حال میں اپنے ابھرتے ہوئے فائیو جی نیٹ ورکوں کو محفوظ بنانے کے لیے اقدامات اٹھانے چاہییں کیونکہ اِن میں بہت کچھ داؤ پر لگا ہوا ہے۔      

سمارٹ فونوں سے کہیں زیادہ تیز

زبردست قسم کی نئی اپلی کیشنوں کو چلا کر فائیو جی ٹکنالوجی ہماری زندگیوں کے ہر ایک پہلو کو تبدیل کر کے رکھ دے گی جیسے:

  • خود بخود چلنے والی کاریں، بسیں، اور ریل گاڑیاں
  • طویل فاصلوں پر موجود ہونے کے باوجود ٹیلی سرجری کے ذریعے سرجنوں کا مریضوں کا علاج
  • بجلی کے گرڈوں اور آب رسانی کے نظاموں جیسے زیادہ تیزی سے کام کرنے والے اہم بنیادی  ڈھانچے
  • "سمارٹ” گھریلو آلات سمیت، نیٹ ورکوں کے ذریعے ایک دوسرے سے منسلک لاکھوں آلات
  • اس ٹکنالوجی کےایسے لامحدود استعمالات جو ابھی دریافت نہیں ہوئے 

شہریوں کے تحفظ کے لیے فائیو جی نیٹ ورکوں کو بہرصورت احتیاط سے تیار کیا جانا چاہیے

فائیو جی سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے، ملکوں کو اب بہرصورت یہ یقینی بنانے کے لیے قدم اٹھانا چاہیے کہ فائیو جی نیٹ ورک محفوظ ہوں گے:

  • اگر جان بوجھ کر "چور دروازوں” سے شہریوں کے ذاتی ڈیٹا پر ہاتھ صاف کیا گیا تو نجی رازداری کو خطرات لاحق ہوں گے
  • اگر "کِل سوئچ” حملے فائیو جی کے نیٹ ورکوں کو درہم برہم یا بند کر سکیں گے تو حفاظت اور سلامتی کو خطرات لاحق ہوں گے
  • اگر "سمارٹ سٹیز” شخصی آزادی کو محدود کرنے اور کمزور شہریوں کو نشانہ بنانے کے لیے نگرانی کرنے والی ٹکنالوجیاں استعمال کریں گے تو انسانی حقوق کو خطرات لاحق ہو جائیں گے
  • اگر ملکِ دانش اور تجارتی راز چرائے جا سکیں گے تو معیشتوں کو خطرات لاحق ہو جائیں گے
  • اگر ملکوں کا انحصار ایسے نیٹ ورکوں پر ہوگا جو آمرانہ حکومتوں کے اختیار میں ہوں گے تو ملکی خود مختاری خطرے میں پڑ جائے گی

آپ کے فائیو جی کی تعمیر میں کس پر بھروسہ کیا جا سکتا ہے؟

  • فائیو جی کے نیٹ ورکوں کے لیے قومی معیارات کو اُس ملک اور اس کے طرز حکومت کو ذہن میں رکھنا چاہیے جس میں فائیو جی کے آلات اور کمپنیوں کے صدر دفاتر واقع  ہیں۔
  • جب کمپنیاں کسی ایسی آمرانہ حکومت کی — جیسے کہ عوامی جمہوریہ چین ہے — خفیہ ہیرا پھیری کے زیراثر ہوں جہاں آزاد عدلیہ اور قانون کی حکمرانی کا فقدان ہو تو بھروسہ قائم نہیں رہ سکتا۔
  • ہمارے تکنیکی ماہرین اس بات پر یقین رکھتے  ہیں کہ ایسا کوئی ٹکنیکل حل نہیں جس سے ہوا وے اور زیڈ ٹی ای کے آلات کو کسی بھی جگہ فائیو جی کے بنیادی ڈھانچے کے نیٹ ورک میں استعمال کی اجازت دینے کی وجہ سے لاحق خطرات کو کم کیا جا سکتا ہو۔
  • (سویڈن کی) ایرکسن ، (فن لینڈ کی) نوکیا، اور (جنوبی کوریا کی) سیم سنگ کمپنیاں مناسب قیمتوں پر بہترین آلات فراہم کرتی ہیں اور یہ کمپنیاں آمرانہ حکومتوں کی مرضیوں کے تابع بھی  نہیں۔ 

امریکہ سب کے لیے فائیو جی کے محفوظ مستقبل کی حمایت کرتا ہے۔

  • ہم فائیو جی کے مستقبل میں مشترکہ سکیورٹی کے لیے اپنے شراکت داروں اور اتحادیوں کے ساتھ شراکت کاری کا خیرمقدم کرتے ہیں۔
  • فائیو جی کے نیٹ ورک کے کسی بھی حصے میں آلات بنانے والی چینی کمپنیوں کو اجازت دینے سے قومی سلامتی، انتہائی اہم بنیادی ڈھانچے، رازداری اور انسانی حقوق کے لیے ناقابل قبول خطرات پیدا ہوتے ہیں۔
  • ہم نے اپنے فائیو جی کے نیٹ ورکوں کے تمام شعبوں میں قابل بھروسہ آلات کی اجازت دینے کے لیے اقدامات اٹھائے ہیں۔
  • امریکہ اس بات کا دوبارہ جائزہ لے گا کہ امریکہ ایسے ممالک کے ساتھ انٹرنیٹ کو کس طرح منسلک ہے اور معلومات کا تبادلہ کرتا ہے جنہوںے نے اپنی فائیو جی کی سکیورٹی پر سمجھوتہ کر رکھا ہے۔   

یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں