rss

امریکہ کی عراق کے ساتھ جاری شراکت

English English, العربية العربية, Português Português, Español Español, Français Français, Русский Русский

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
دفتر خارجہ کی ترجمان مورگن اورٹیگس کا بیان
10 جنوری 2020

امریکہ مشرق وسطیٰ میں اچھائی کی قوت ہے۔ عراق میں ہماری فوجی موجودگی کا مقصد داعش کے  خلاف جنگ جاری رکھنا ہے اور جیسا کہ وزیر خارجہ نے کہا ہے، ہم امریکیوں، عراقیوں اور اپنے اتحادی شراکت داروں کی حفاظت کے لیے پرعزم ہیں۔ عراق میں داعش کے خلاف اپنے فیصلہ کن مشن کی بابت ہماری سوچ واضح رہی ہے۔ اس وقت عراق بھیجے گئے کسی بھی وفد کی بات چیت کا محور یہ ہو گا کہ دونوں ممالک کی تزویراتی شراکت کے بارے میں بہترین طور سے تجدید عہد کیسے ممکن ہے۔ وہاں سے فوجی دستوں کے انخلا پر بات نہیں ہو گی بلکہ مشرق وسطیٰ میں ہماری درست اور مناسب عسکری صورتحال پر بات چیت ہو گی۔ آج نیٹو کا وفد عراق میں نیٹو کے کردار میں اضافے پر بات چیت کے لیے دفتر خارجہ میں موجود ہے۔ یہ اقدام صدر کی جانب سے ہماری تمام مجموعی دفاعی کوششوں میں بوجھ بانٹنے کی خواہش سے مطابقت رکھتا ہے۔ تاہم امریکی اور عراقی حکومتوں کے مابین ناصرف سلامتی بلکہ ہماری مالیاتی، اقتصادی اور سفارتی شراکت سے متعلق بات چیت کی بھی ضرورت ہے۔ ہم ایک خودمختار، خوشحال اور مستحکم عراق کے ساتھ دوستی اور شراکت داری چاہتے ہیں۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں