rss

ایران پر کڑی پابندیاں

Français Français, English English, العربية العربية, Português Português, Русский Русский, Español Español, 中文 (中国) 中文 (中国)

امریکہ کا محکمہ خارجہ
ترجمان کا دفتر
واشنگٹن، ڈی سی
10 جنوری 2020
وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان

امریکہ آج، امریکی افواج اور مفادات کے خلاف ایران کے حملوں کے جواب میں اور ایرانی حکومت کواپنی پُرتشدد خارجہ پالیسی  چلانے کی خاطر درکار آمدنی سے محروم کرنے کے لیے متعدد اقدامات اٹھا رہا ہے۔ ہم افراد اور اداروں کو ایرانی حکومت کے دہشت گردی کے بہت سے محاذوں کی حمایت کرنے پر جوابدہ ٹھہرانا جاری رکھیں گے۔

ہم  انتظامی حکم نامہ نمبر 13876 (ای او 13876) کے تحت ایران کے سپریم لیڈر کی طرف سے تعینات کیے جانے والے یا اُن کے لیے کام کرنے والے یا اُن کی طرف سے کام کرنے والے آٹھ اعلٰی ایرانی رہنماؤں پر پابندیاں لگا رہے ہیں۔ اِن میں علی شمخانی، سیکرٹری سپریم سکیورٹی کونسل، غلام رضا سلیمانی، کمانڈر بسیج، اور دیگر چھ اعلٰی اہل کار شامل ہیں۔ ان افراد نے پورے خطے میں ایران کی دہشت گردی کی سازشوں پر عمل کیا اور تباہی کی مہمات چلائیں اور یہ آزادی کے لئے احتجاج کرنے والے تقریبا 1,500 ایرانیوں کے حالیہ قتلوں میں ملوث ہیں۔

ایرانی حکومت اپنی دھاتی صنعت سے ہونے والی آمدنی کو عدم استحکام پیدا کرنے والی سرگرمیوں کے لیے مالی وسائل کے طور پر استعمال کرتی ہے۔ لہذا، محکمہ خارجہ "ایران کے آزادی اور پھیلاؤ کے روک تھام کے قانون” کی دفعہ 1245 کے تحت "پامچل ٹریڈنگ (بیجنگ) کمپنی لمیٹڈ” پر پابندی لگا رہا ہے جس نے ایک ایسی ایرانی کمپنی کو 29,000 میٹرک ٹن سٹیل منتقل کیا جسے پہلے ہی خصوصی طور پر عالمی دہشت گرد نامزد کیا جا چکا ہے۔ اسی طرح محکمہ خزانہ بھی ای او نمبر 13871 کے تحت بائیس اداروں اور تین جہازوں پر ایران کے لوہے، سٹیل، ایلومینیم، یا تانبے کے شعبوں میں لین دین کرنے اور دیگر متعلقہ سرگرمیوں کی وجہ سے پابندیاں لگا رہا ہے۔

صدر تعمیراتی، مصنوعات سازی، ٹیکسٹائل اور کان کنی سمیت ایرانی معیشت کے اضافی شعبوں کے سلسلے میں پابندیاں عائد کرنے کا اختیار دینے والا ایک انتظامی حکم نامہ بھی جاری کریں گے۔ اس اقدام سے (ایرانی حکومت) کے مختلف محصولات کے سلسلوں کو ہدف بنانے کی امریکی صلاحیت میں نمایاں اضافہ ہوگا۔

جیسا کہ صدر ٹرمپ نے کل کہا، ہماری پابندیاں اس وقت تک نافذ العمل رہیں گی جب تک ایران اپنا طرز عمل تبدیل نہیں کرتا۔ مہذب دنیا کو ایرانی حکومت کو ایک واضح اور متفقہ پیغام بھیجنا ہوگا: یعنی ایران کی دہشت گردی، قتل و غارت گری کی مہم کو اب مزید برداشت نہیں کیا جائے گا۔ امریکہ تمام اقوام سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ ایرانی حکومت کے دہشت گردی کے نظریہ کے خلاف اٹھ کھڑی ہوں اور ایران کو اس کے تشدد کا ذمہ دار ٹھہرائیں۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں