rss

ایران سے متعلق حکمت عملی: موجودہ ہفتے کی صورتحال

English English, हिन्दी हिन्दी, العربية العربية

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
25 جنوری 2020
4:17 سہ پہر

 

”۔۔۔ ہمارا مقصد دوہرا  ہے یعنی ایران  کو جوہری ہتھیار حاصل کرنے سے روکنا اور  یہ امر یقینی بنانا کہ دنیا میں ریاستی سطح پر دہشت گردی کا سب سے بڑا معاون ملک امریکیوں کو نقصان نہ پہنچا سکے۔ لہٰذا ہم اس خطرے کو محدود کرنے کے لیے روزانہ کی بنیاد پر ہر ممکن کام کرتے ہیں اور اس دوران صدر کے اس عزم کو پورا کرنے کی کوشش میں رہتے ہیں کہ ہم امریکیوں کی حفاظت یقینی بنانا چاہتے ہیں۔ چنانچہ اپنے لیے خطرے کو کم کرنا، مشرقی وسطیٰ میں خطرے کی زد میں امریکی نوجوان مردوخواتین کی تعداد میں کمی لانا صدر ٹرمپ کا دوہرا مقصد ہے۔”

۔۔۔ وزیر پومپیو، ڈبلیو ایف ایل اے۔اے ایم ٹیمپا بے کو انٹرویو، 23 جنوری 2020

امریکہ کی جانب سے ایران کی پیٹروکیمیکل صنعت پر مزید پابندیوں کا نفاذ

  • دفتر خارجہ چینی کمپنی شن ڈونگ کوئی وانگ ڈا پیٹروکیمیکل کمپنی لمیٹڈ، ہانگ کانگ سے تعلق رکھنے والی ٹریلینس پیٹروکیمیکل اور ہانگ کانگ کے ادارے جیازیانگ انڈسٹری ہانگ کانگ لمیٹڈ پر جانتے بوجھتے ایران سے پیٹروکیمیکل مصنوعات کی خریداری، حصول، فروخت یا نقل وحمل کے ضمن میں نمایاں لین دین کی پاداش میں  پابندیاں عائد کر رہا ہے۔ یہ پابندیاں انتظامی حکم (ای او) 13846 کی مطابقت سے عائد کی جا رہی ہیں۔
  • دفتر خارجہ مندرجہ بالا کمپنیوں کے دو انتظامی افسروں پر بھی  پابندیاں عائد کر رہا ہے۔ ان میں ٹریلینس پیٹروکیمیکل کے مینجنگ ڈائریکٹر علی بیاندرن اور شن ڈونگ کوئی وانگ ڈا پیٹروکیمیکل کمپنی لمیٹڈ کے چیئرمین اور قانونی نمائندے ژی چنگ وانگ شامل ہیں۔
  • محکمہ خزانہ بھی ٹریلینس پیٹروکیمیکل، ہانگ کانگ کے ادارے سیج انرجی ایچ کے لمیٹڈ، چینی ادارے پیک ویو انڈسٹری کمپنی اور متحدہ عرب امارات کے ادارے بینیتھ کو ڈی ایم سی سی کو قبل ازیں پابندیوں کی زد میں آنے والی ایران کی قومی تیل کمپنی (این آئی او سی) کی معاونت یا مدد کرنے کی پاداش میں انتظامی حکم 13846 کی مطابقت سے پابندیوں کے لیے نامز دکر رہا ہے۔ ان اداروں نے مجموعی طور پر سیکڑوں ملین ڈالر این آئی او سی کو منتقل کیے ہیں جس کا ایرانی پاسداران انقلاب کی قدس فورس (آئی آر جی سی-کیو ایف) اور مشرق وسطیٰ میں اس کی معاونت سے سرگرم دہشت گرد گروہوں اور ملیشیاؤں کو مالی وسائل کی فراہمی میں اہم کردار رہا ہے۔
  • مزید معلومات کے لیے براہ مہربانی محکمہ خارجہ کا بیان ملاحظہ کیجیے۔
  • آج جن اداروں کو ہدف بنایا گیا ہے وہ امریکی پابندیوں سے برعکس ایرانی پیٹروکیمیکل اور پٹرولیم برآمدات کو سہولت دے رہے ہیں۔ پیٹروکیمیکل شعبے میں تمام اداروں اور افراد کو اس کا نوٹس لینا چاہیے۔ پابندیوں کے نفاذ بارے امریکی عزم متزلزل نہیں ہو گا۔ جب تک ایرانی حکومت اپنی تخریبی سرگرمیوں کی معاونت کے لیے پٹرولیم اور پیٹروکیمیکل صنعتوں سے حاصل شدہ مالی وسائل کا ناجائز استعمال جاری رکھے گی ہم ایسی تجارت میں سہولت دینے والے ہر ادارے اور فرد پر پابندی عائد کرتے رہیں  گے۔
  • ایرانی حکومت کو اپنی تخریبی سرگرمیاں بند کرنا ہوں گی بصورت دیگر وہ مزید بھاری معاشی دباؤ اور سفارتی تنہائی کا سامنا کرتی رہے گی۔ جب تک ایران اپنا طرزعمل تبدیل نہیں کرتا اس وقت تک ہماری پابندیاں برقرار رہیں گی۔ ہم ایرانی حکومت کی ضرررساں سرگرمیوں، اپنے مفاد کے لیے اٹھائے اقدامات اوراس کے  کھلم کھلا جبر کو بے نقاب کرتے رہیں گے۔
  • مزید معلومات کے لیے براہ مہربانی وزیر پومپیو کا بیان ملاحظہ کیجیے۔

اس ہفتے کے اہم ٹویٹ:

وزیر پومپیو @SecPompeo 23 جنوری

ایران کا طرزعمل تبدیل ہونے تک اس پر زیادہ سے زیادہ دباؤ جاری رہے گا۔ آج ہم نے ایرانی تیل اور پیٹروکیمیکل شعبہ جات م میں کام کرنے والے چین، ہانگ کانگ اور متحدہ عرب امارات کے اداروں پر پابندیاں عائد  کیں۔ اگر آپ اس حکومت کی سرگرمیوں میں سہولت دیتے ہیں تو پھر آپ پر پابندیاں لگائی جائیں گی۔

ترجمان دفتر خارجہ @statedeptspox 22 جنوری

ایرانی امریکی اور ناسا #NASA کی نئی خلا باز جیسمین موغبیلی کو مبارکباد! 1979 میں ان کے والدین ایران #Iran چھوڑ کر امریکہ آئے۔ آج وہ ستاروں پر کمند ڈالنے کا ارادہ رکھتی ہیں اور چاند پر جانے والی پہلی خاتون بھی ہو سکتی ہیں۔ ان کی کامیابی سے ظاہر ہوتا ہے کہ استبدادی حکومت کی پابندیوں کے بغیر ایک عورت کیا کچھ کر سکتی ہے۔

وزیر پومپیو @SecPompeo 20 جنوری

ہم ایران #Iran کی پشت پناہی میں سرگرم حزب اللہ #Hizballah کو دہشت گرد تنظیم نامزد کرنے کے اعلان پر کولمبیا، ہنڈوراس اور گوئٹے مالا کی تحسین کرتے ہیں۔ یہ اور دیگر بین الاقوامی دہشت گرد گروہ خطے میں بدستور سرگرم ہیں۔ امریکہ ان خطرات کا مقابلہ کرنے کے لیے عالمی حمایت جمع کرتا رہے گا۔


اصل مواد دیکھیں: https://www.state.gov/this-week-in-iran-policy/
یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں