rss

امریکہ اور سعودی عرب: 75 برس طویل سفارتی شراکت داری

العربية العربية, English English, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
حقائق نامہ
19 فروری 2020

 

”مملکت سعودی عرب کی صورت میں امریکہ کے پاس ایک اہم شراکت دار ہے۔ وہ ہمارے شراکت دار ہونے کی حیثیت سے اور ہمیں اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف مزاحمت میں مدد دے کر امریکیوں کو محفوظ رکھتے ہیں۔” ۔۔۔ وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو، 9 دسمبر 2019

وزیر خارجہ پومپیو 19 تا 21 فروری سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔ اس موقع پر وہ خلیج کے علاقے میں استحکام و سلامتی اور معاشی خوشحالی و تحفظ توانائی سمیت ہمارے دیرینہ مشترکہ مفادات کو فروغ  دینے کے لیے شاہ سلمان بن عبدالعزیز السعود، ولی عہد شہزادہ محمد بن سلیمان، وزیر خارجہ فیصل بن فرحان اور دیگر سعودی حکام سے ملاقاتیں کریں گے۔

ہماری شراکت داری مشرق وسطیٰ میں امن و استحکام کو تقویت دیتی ہے

  • 14 فروری کو 1945 میں یوایس ایس کوئنسی پر صدر فرینکلن ڈیلانو روزویلٹ کی شاہ عبدالعزیز سے ملاقات کو 75 برس مکمل ہو گئے ہیں۔ اس وقت کے بعد اب تک ہم نے باہم قریبی سفارتی، عسکری اور اقتصادی تعلقات برقرار رکھے ہیں۔
  • امریکہ۔سعودی شراکت داری مشرق وسطیٰ میں امن اور استحکام کے لیے، خاص طور پر یمن، عراق، لبنان اور شام میں ایرانی جارحیت کے خلاف ایک اہم دفاع ہے۔ سعودی عرب توانائی کی عالمی منڈیوں کا استحکام یقینی بنانے میں مدد دیتا ہے اور خلیج میں اہم تجارتی راستوں پر سمندری سفر کی آزادی کے تحفظ کے لیے کام کرنے والی کثیر ملکی ٹاسک فورسز میں شریک ہوتا ہے۔
  • امریکہ دفاعی سازوسامان کی بیرون ملک فروخت (ایف ایم ایس) اور امریکی فورسز کے ساتھ مل کر کارروائی کی صلاحیت بہتر بنانے کے لیے مشترکہ فوجی مشقوں جیسے پروگراموں کے ذریعے سعودی عرب کی دفاعی صلاحیت بڑھانے کے لیے پرعزم ہے۔ سعودی عرب کے لیے ایف ایم ایس پروگرام کا مجموعی حجم 129 ارب ڈالر ہے جو تمام دفاعی شعبہ جات کا احاطہ کرتا ہے۔

امریکہ۔سعودی معاشی تعلقات دونوں ممالک میں خوشحالی کو فروغ دیتے ہیں

  • امریکہ اور سعودی عرب کے مابین مضبوط معاشی تعلقات ہیں۔ امریکی کمپنیاں سعودی عرب کے طول و عرض میں کام کر رہی ہیں۔ سعودی عرب امریکی گاڑیوں کی صنعت کے لیے پانچویں سب سے بڑی برآمدی منڈی اور امریکی ہوائی جہازوں کے لیے بھی ایک نفع بخش مارکیٹ ہے۔ سعودی عرب کے لیے امریکی برآمدات سے امریکہ میں 165,000 سے زیادہ نوکریاں چل رہی ہیں۔
  • توانائی کے شعبے میں امریکہ اور سعودی عرب کے جامع تجارتی تعلقات کا آغاز 1933 میں ہوا تھا جب سٹینڈرڈ آئل آف کیلیفورنیا نے سعودی عرب کے مشرقی صوبے میں تیل نکالنے کے لیے کھدائی کا آغاز کیا تھا۔
  • سعودی کمپنیاں امریکہ میں سرمایہ کاری میں اضافہ کر رہی ہیں جس میں سعودی تیل کمپنی آرامکو کی ٹیکساس میں موٹیوا پورٹ آرتھر کارخانے کی ملکیت بھی شامل ہے جو کہ شمالی امریکہ میں تیل صاف کرنے کا سب سے بڑا کارخانہ ہے۔
  • متعدد امریکی کمپنیاں معیشت کو متنوع بنانے کے سعودی پروگرام ”وژن 2030” میں اس کی شراکت دار ہیں۔ ریاض سے باہر دنیا میں سب سے بڑے سِکس فلیگز تفریحی پارک کی تعمیر شروع ہونے کو ہے، اے ایم سی ملک بھر میں 50 نئے تھیٹر کھول رہی ہے اور اپریل 2018 میں اس نے 35 سال بعد سعودی عرب میں پہلی فلم دکھائی۔ امریکی کمپنیوں کی قیادت میں ریاض میں نئی میٹرو کی تعمیر کا کام جاری ہے۔

امریکہ اور سعودی عرب کے مابین مضبوط ثقافتی اور تعلیمی تعلقات ہیں

  • گزشتہ دس برس میں 250,000 سے زیادہ سعودی شہریوں اور ان کے اہلخانہ نے امریکہ میں حصول تعلیم کے لیے ویزے لیے۔ امریکہ ہونہار نوجوانوں اور موجودہ سعودی رہنماؤں کو ہمارے ”انٹرنیشنل وزیٹر لیڈرشپ پروگرام” اور تبادلے کے دیگر متعدد پروگراموں کے ذریعے امریکہ میں علم و آگاہی کی بہترین سہولیات کے تجربے کا موقع بھی مہیا کرتا ہے۔
  • امریکہ۔سعودی شراکت داری کی جڑیں قریبی دوستی اور تعاون پر مشتمل سات دہائیوں سے زیادہ عرصے میں پیوسط ہیں۔ تبادلے کے مواقع باہمی سمجھ بوجھ کے فروغ اور تعلقات میں طویل مدتی ترقی کی کلید ہوتے  ہیں اور ان کی بدولت دونوں ملکوں کی دوستی اورباہم  تعاون میں مزید بہتری آئی ہے۔
  • اندازے کے مطابق دفتر خارجہ کے پروگراموں سے فارغ التحصیل 3000 سعودی طلبہ نے امریکہ میں مختلف صلاحیتیں اور براہ راست علم حاصل کیا اور پھر وطن واپس جا کر اپنے علاقوں میں کاروباری نظامت کو فروغ دینے، خواتین اور نوجوانوں کو  بااختیار بنانے، پسماندہ آبادیوں تک رسائی پانے اور تعلیم کا معیار بہتر بنانے کی سرگرمیوں میں شمولیت اختیار کی۔
  • درخواست ملنے پر امریکہ سعودی عرب کی وزارتوں میں خاص طور پر تعلیم، تجارت اور اچھی حکمرانی کے حوالے سے تکنیکی مدد مہیا کرتا ہے۔

یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں