rss

صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ انڈیا کے ساتھ ہماری تزویراتی شراکت کو مضبوط بنا رہے ہیں

English English, हिन्दी हिन्दी

ائٹ ہاؤس
دفتر برائے سیکرٹری اطلاعات
برائے فوری اجرا
25 فروری 2020

”امریکہ کو انڈیا سے پیار ہے، امریکہ انڈیا کی عزت کرتا ہے، اور امریکہ ہمیشہ انڈیا کے عوام کا خیرخواہ اور وفادار دوست رہے گا۔” ۔۔۔ صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ

ہماری مضبوط شراکت کا عملی اظہار: صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ نے اس ہفتے انڈیا کا دورہ کیا جس کا مقصد دونوں ممالک کے مابین اہم شراکت کو آگے  بڑھانا تھا۔

اس ہفتے صدر ٹرمپ نے انڈیا کا اپنا پہلا سرکاری دورہ کیا تاکہ دونوں ممالک کے درمیان پہلے سے مضبوط تزویراتی شراکت کو وسعت دی جائے۔

اس دورے میں صدر نے احمد آباد کے موتیرا سٹیڈیم میں 110000 سے زیادہ لوگوں کے اجتماع کے سامنے امریکہ انڈیا تعلقات کی اہمیت پر بات کی۔ صدر کو تاج محل سمیت انڈیا کے بعض اہم ثقافتی مقامات کا دورہ کرنے کا موقع ملا۔

ہمارے پرجوش معاشی تعلقات میں اضافہ: امریکہ اور انڈیا مضبوط معاشی تعلقات سے مستفید ہو رہے ہیں جن کی بدولت دونوں ممالک میں خوشحالی اور سرمایہ کاری میں اضافہ ہواہے اور نوکریاں پیدا ہوئی  ہیں۔ امریکہ اور انڈیا کے مابین دیرینہ تجارتی تعلقات ہیں اور صرف 2018 میں ہی دوطرفہ تجارت کا حجم 142 ارب ڈالر تک پہنچ گیاتھا ۔

انڈیا امریکہ کی توانائی برآمدات کی فروغ پاتی منڈی ہے۔

صدر ٹرمپ کے حکومت میں ہوتے ہوئے انڈیا کے لیے امریکی توانائی برآمدات میں نمایاں اضافہ ہوا ہے اور اس سے امریکہ کو اربوں ڈالر آمدنی ہوئی ہے۔

انڈیا میں ایکسون موبل نے وہاں قدرتی گیس کی تقسیم کے نظام کو بہتر بنانے کے معاہدے پر دستخط کیے تاکہ ملک میں مزید امریکی ایل این جی برآمدات کی گنجائش پیدا ہو سکے۔

صدر اور وزیراعظم مودی ایسے تجارتی معاہدے کے لیے کام کر رہے ہیں جس کی بدولت دونوں ممالک کے معاشی تعلقات سے پورا فائدہ اٹھایا جا سکے گا۔

امریکہ اور انڈیا اس خطے میں پائیدار، شفاف اور معیاری بنیادی ڈھانچے میں سرمایہ کاری کے لیے پرعزم ہیں۔

باہمی سکیورٹی تعلقات میں وسعت: امریکہ اور انڈیا سلامتی کے شعبے میں اپنے تعلقات کو مزید مضبوط بنا رہے ہیں اور آزاد و کھلے خطہ ہندوالکاہل کے فروغ میں مدد دے رہے ہیں۔

امریکہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے، عالمی سطح پر منشیات کی سمگلنگ روکنے اور آزاد و کھلے خطہ ہندوالکاہل کو ترقی دینے کے لیے انڈیا کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔

صدر ٹرمپ اور وزیراعظم مودی خطے کے دوسرے ممالک سے کہہ رہے ہیں کہ وہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لیے اقدامات اٹھائیں۔

امریکہ انڈیا دفاعی تعاون پورے خطہ ہندوالکاہل کی خوشحالی اور سلامتی میں معاون ہے۔

اس ہفتے صدر ٹرمپ کے  دورے میں انڈیا نے اعلان کیا کہ وہ 3 ارب ڈالر سے زیادہ مالیت کا امریکی ساختہ دفاعی سازوسامان خریدے گا جس میں اپاچی اور ایم ایچ۔60 آر ہیلی کاپٹر بھی شامل ہیں۔

صدر اور وزیراعظم مودی نے محفوظ 5جی نظام تیار کرنے کی اہمیت پر تبادلہ خیال کیا تاکہ رابطہ کاری کے قابل اعتماد مستقبل کو فروغ دیا جا سکے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں