rss

جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے (این پی ٹی) کی 50ویں سالگرہ

English English

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
دفتر خارجہ کا بیان
5 مارچ 2020

 

  امریکہ جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے کی 50 ویں سالگرہ منا رہا ہے اور اس عرصہ میں دنیا کو محفوظ تر اور مزید خوشحال بنانے میں اپنی بہت سی کامیابیوں پر خوشی کا اظہار کرتا ہے۔ صدر ٹرمپ نے  ایک بیان جاری کیا جس میں این پی ٹی سے امریکی عہد کی کامیابی کو واضح کیا گیا ہے۔

اس موقع پر امریکہ نے معاہدے کے دوسرے امین برطانیہ اور روس کے ساتھ مل کر نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارٹر میں این پی ٹی گروہی مباحثے  کا انعقاد کیا۔ اس تقریب کی خاص بات یہ تھی کہ تینوں ممالک نے این پی ٹی پر مذاکرات کے حوالے سے قبل ازیں خفیہ رکھی جانے والی متعدد دستاویزات عام کیں۔ اسسٹنٹ سیکرٹری خارجہ برائے عالمی سلامتی و جوہری عدم پھیلاؤ کرسٹوفر فورڈ نے جوہری عدم پھیلاؤ کے حامی اور سابق سینیٹر سام نن کے ساتھ امریکی شرکا کی قیادت کی اور افتتاحی کلمات کہے۔

جوہری عدم پھیلاؤ کے حوالے سے 2020 کی جائزہ کانفرنس 27 اپریل تا 22 مئی نیویارک میں ہو گی اور یہ ریاستی فریقین کو این پی ٹی کے فوائد بارے یاد دہانی کرانے، معاہدے سے وابستگی کی تصدیق نو اور آنے والی نسلوں کے لیے جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے کو قائم اور مضبوط رکھنے کی کوششوں کے لیے خود کو ازسرنو وقف کرنے کا موقع ہے۔

امریکہ این پی ٹی کے تمام فریقین پر زور دیتا ہے کہ وہ جوہری عدم پھیلاؤ کے نظام کی اثرپذیری سے حاصل ہونے والے فوائد کو واضح کرتے ہوئے اس معاہدے میں ہمارے مشترکہ مفادات پر توجہ مرکوز رکھیں۔ اس میں جوہری اسلحے کے خاتمے اور پرامن جوہری تعاون کے لیے ماحول پیدا کرنے میں مدد دینا بھی شامل ہے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں