rss

کوویڈ۔19سے نمٹنے کے اقدامات اور ویکسین کی تیاری میں امریکہ کا قائدانہ کردار

العربية العربية, English English, Русский Русский, Español Español, Português Português, Français Français, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
کوویڈ۔19سے نمٹنے کے اقدامات اور ویکسین کی تیاری میں امریکہ کا قائدانہ کردار
4 مئی 2020

 

جیسا کہ حالیہ منصوبہ  عمل میں بیان کیا گیا ہے، امریکہ دنیا کو کوویڈ۔19 سے تحفظ دینے کے لیے ویکیسن  اور طریقہ علاج کی دریافت  کے لیے  اپنے حکومتی اداروں، نجی شعبے، یونیورسٹیوں اور بیرون ملک شراکت داروں کے روشن ترین اذہان کو اکٹھا کر رہا ہے۔ امریکہ اس کوشش میں دنیا کی نمایاں جمہوریتوں اور آزادی معیشتوں کی قوت اور مشکلات میں دوبارہ ابھرنے کی اہلیت سے بھرپور استفادے کے لیے اپنی جی7 صدارت سے کام لے رہا ہے۔ امریکہ کوویڈ۔19 وبا کے پھیلاؤ میں کمی لانے اور بالاآخر اس کا خاتمہ کرنے کی غرض سے وسائل منظم کرنے کے لیے دوسرے ممالک کی کوششوں کا خیرمقدم کرتا ہے۔ ان میں آج یورپ میں امدادی وعدوں سے متعلق کانفرنس جیسی کوششیں شامل ہیں۔ اس کانفرنس کی بدولت دیگر اقدامات کے ساتھ وبا کے مقابلے کی تیاری کے اختراعی اقدامات سے متعلق اتحاد (سی ای پی آئی) اور ویکسین و معنون سازی کی غرض سے عالمگیر اتحاد (جی اے وی آئی) لیے برطانیہ میں 4 جون کو ہونے والی امدادی وعدوں کی کانفرنس کو مدد ملے گی۔

ویکسین کی تیاری اور علاج معالجے میں مدد کے لیے کُل امریکی کوششوں میں درج ذیل اقدامات شامل ہیں:

  • کوویڈ۔19 کے حوالے سے طریقہ علاج اور ویکیسین کی تیاری کے تیزرفتار اقدامات (اے سی ٹی آئی وی) کی شراکت کے زیراہتمام ایک مشترکہ طریق کار وضع کیا جا رہا ہے جس کا مقصد ویکسین اور ادویات کی تیاری کے لیے  موزوں ترین اقدام کو  فوقیت دینا، طبی تجربات کو باترتیب بنانا، انضباطی عوامل میں ارتباط پیدا کرنا اور کوویڈ۔19 اور مستقبل کی وباؤں کے خلاف تیزتر اقدامات کے لیے تمام شراکت داروں سے سرمایہ حاصل کرنا ہے۔ یہ قدم  کوویڈ۔19 وبا کے خلاف مربوط تحقیقی ردعمل کے لیے اٹھایا گیا ہے ا ور اس میں درجن سے زیادہ سرکردہ بائیوفارماسوٹیکل کمپنیاں، اسسٹنٹ سیکرٹری برائے تیاری و ردعمل کا دفتر برائے صحت و انسانی خدمات، بیماری پر قابو پانے اور روک تھام کے ادارے، خوراک و ادویہ سے متعلق امریکی انتظامیہ اور یورپی ادارہ برائے ادویات  یکجا ہیں ۔
  • امریکی حکومت نے تحقیق کے شعبے میں دیرینہ مالی معاونت کے علاوہ امریکی اور عالمی ادویہ ساز صنعت کے ساتھ شراکت میں کوویڈ۔19 ویکسین  کی تیاری کے لیے ایک بلین ڈالر سے زیادہ خرچ کیے ہیں۔ امریکی حکومت کی معاونت سے ویکسین کی تیاری کی دو کوششیں فی الوقت پہلے مرحلے کے طبی تجربات سے گزر رہی ہیں۔ ان میں ایک ویکسین ناروے سے تعلق رکھنے والے ادارے سی ای پی آئی کے ساتھ شراکت سے تیار کی جا رہی ہے۔
  • امریکہ گزشتہ دو دہائیوں کے دوران عالمی سطح پر صحت کے شعبے میں تحفظ زندگی کی کوششوں کے لیے 140 بلین ڈالر سے زیادہ خرچ کر چکا ہے۔ اب امریکہ ان کوششوں کو آگے بڑھانے کے لیے تحفظ صحت کے عالمگیر ایجنڈے (جی ایچ ایس اے)، ایڈز سے چھٹکارے کے لیے امریکی صدر کے ہنگامی منصوبے (پیپفار)، صدر کے انسداد ملیریا اقدام (پی ایم آئی) اور ٹی بی و پولیو کو روکنے کے لیے دی جانے والی امداد کے حوالے سے اپنے سالہا سال کے تجربے کو کام میں لا رہا ہے۔ امریکی حکومت دنیا بھر میں خطرے کے دہانے پر موجود 100 سے زیادہ ممالک میں صحت عامہ کی تعلیم  اور طبی مراکز میں پانی و نکاسی آب کی سہولیات بہتر بنانے، بیماری کے تجزیے کی صلاحیت کو جدید خطوط پر استوار کرنے، بیماری کی نگرانی اور فوری اقدامات کی صلاحیت میں اضافے کے لیے پہلے ہی 500 ملین ڈالر سے زیادہ مختص کر چکی ہے اور اس امداد میں مزید اضافہ ہو گا۔

یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں