rss

تیان من سکوائرکے احتجاج کی 31ویں سالگرہ

English English, العربية العربية, Français Français, हिन्दी हिन्दी, Русский Русский, 中文 (中国) 中文 (中国)

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
ترجمان دفتر خارجہ مورگن اورٹیگس کا بیان
3 جون 2020

 

آج ہم چین کے بہادر عوام کو تعظیم پیش کرتے ہیں جنہیں جمہوریت، انسانی حقوق اور بدعنوانی سے پاک معاشرے کے پُرامن مطالبات پر اس وقت تشدد کا سامنا کرنا پڑا جب 4 جون 1989 کو چین کی کمیونسٹ پارٹی (سی سی پی) نے ٹینکوں اور بندوقوں سے مسلح پیپلز لبریشن آرمی کو تیان من سکوائر میں بھیج دیا تھا ۔ اگرچہ تیان من کے احتجاج نے سوویت یونین اور مشرقی یورپ میں جبر کا شکار لوگوں کو جمہوری تبدیلی کے مطالبے اور اس مقصد کے حصول کے لیے تحریک دی، تاہم چین کی کمیونسٹ حکومت اطلاعات پر اپنے جابرانہ کنٹرول اور سراسر ظلم سے کام لیتے ہوئے اپنا وجود برقرار رکھنے میں کامیاب  رہی۔

اکتیس سال کے بعد بھی تیان من کے لاپتہ یا مرنے والے مظاہرین  کی تعداد نامعلوم ہے۔ امریکہ ان کی امنگوں کی تحسین کرتا ہے اور امریکہ کے عوام اُن خاندانوں کے ساتھ ہیں جو تاحال اپنے گمشدہ عزیزوں کا غم منا رہے ہیں۔ ان میں تیان من کی حوصلہ مند مائیں بھی شامل ہیں جنہوں نے بہت بڑی ذاتی مشکلات اور خطرات کے باوجود اپنے بچوں کی اموات کا حساب لینے کی خواہش کبھی ترک نہیں کی۔ ہم لوگوں کی ہلاکتوں اور گمشدگیوں کے ذمہ داروں کے عوامی احتساب کا مطالبہ دہراتے ہیں۔

ہم 4 جون 1989 کے متاثرین کا غم مناتے ہیں اور چین کے عوام کے ساتھ کھڑے ہیں جو ایسی حکومت کی خواہش کرتے ہیں جو انسانی حقوق، بنیادی آزادیوں اور بنیادی انسانی وقار کا تحفظ کرے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں