rss

چین کی کمیونسٹ پارٹی کا مکروہ پروپیگنڈہ

English English, العربية العربية, हिन्दी हिन्दी, Português Português, Español Español

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان
6جون 2020

 

چینی کمیونسٹ پارٹی کی جانب سے بنیادی انسانی وقار سے اپنے آمرانہ انکار کا جواز پیدا کرنے کے لیے جارج فلوئیڈ کی المناک موت سے فائدہ اٹھانے کے اقدام نے اس کا حقیقی چہرہ ایک مرتبہ پھر آشکار کر دیا ہے۔ جیسا کہ پوری تاریخ گواہ ہے کوئی بھی جھوٹ جب تک پارٹی کی طاقت کی ہوس پوری کرتا ہو اس وقت تک وہ بیہودہ نہیں ہوتا۔ اس مضحکہ خیز پروپیگنڈے سے کسی کو مزید بیوقوف نہیں بننا چاہیے۔

امریکہ اور چینی کمیونسٹ پارٹی (سی سی پی) کے مابین تضاد کی یہ واضح ترین مثال ہے۔ 

چین میں جب چرچ کو نذرآتش کیا جاتا ہے تو اس حملے کا حکم قریباً یقینی طور پر سی سی پی نے جاری کیا ہوتا ہے۔ امریکہ میں جب کوئی چرچ جلایا جاتا ہے تو حکومت آتش زنی کرنے والوں کو سزا دیتی ہے اور حکومت ہی آگ بجھانے کے لیے ٹرک، پانی، امداد اور چرچ کے پیروکاروں کو دلاسہ دیتی ہے۔

چین میں ہانگ کانگ سے تیان من سکوائر تک پُرامن مظاہرین کو مسلح ملیشیا کے ارکان نے محض بات کرنے پر مارا پیٹا۔ ایسی بد سلوکیوں کی اطلاع دینے والے صحافیوں کو طویل مدت کے لیے جیل بھیجا جاتا ہے۔ امریکہ میں وفاقی اور ریاستی سطح پر قانون سرکش حکام کو انصاف کے کٹہرے میں لاتا ہے، لوٹ مار اور تشددد کو موثر طور پر روکتے ہوئے پُرامن احتجاج کا خیرمقدم کرتا ہے اور تمام لوگوں کی املاک اور آزادی کے تحفظ کے لیے آئین کی مطابقت سے طاقت استعمال کرتا ہے۔ ہماری آزاد صحافت ملک میں پیش آنے والے واقعات کی جامع طور پر اطلاع دیتی  ہے جسے پوری دنیا دیکھ سکتی ہے۔

چین میں جب ڈاکٹروں اور صحافیوں نے نئی بیماری کے خطرات سے خبردار کیا تو سی سی پی نے انہیں خاموش اور غائب کرا دیا اور ہلاکتوں کی تعداد اور وبا کی وسعت کے بارے میں جھوٹ بولا۔ امریکہ میں ہم زندگی کی قدر کرتے ہیں اور ہم نے لوگوں کے  علاج اور نگہداشت کے شفاف نظام بنائے ہیں اور پوری دنیا کے لیے وبا کے خاتمے سے متعلق کسی بھی دوسرے ملک سے زیادہ ذمہ داری لیتے ہیں۔

چین میں جب شہری سی سی پی کے اصول سے الگ خیالات اپنائیں تو پارٹی انہیں تعلیم نو کے کیمپوں میں قید کر دیتی ہے۔ جب ہزاروں سالہ حیران کن تہذیب میں مشترکہ بنیاد کے حامل ہانگ کانگ اور تائیوان کے شہریوں جیسے لوگ آزادی کی راہ اختیار کرتے ہیں تو اس آزادی کو کچل دیا جاتا ہے اور لوگوں کو پارٹی کی ہدایات اور مطالبات کے تابع کر دیا جاتا ہے۔ اس سے برعکس امریکہ میں لاپرواہانہ فسادات میں بھی ہم قانون کی حکمرانی، شفافیت  اور ناقابل انتقال انسانی حقوق کے حوالے سے اپنے مضبوط عزم کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

حالیہ دنوں بیجنگ نے مسلسل سچائی کی توہین اور قانون سے حقارت کا اظہار کیا ہے۔ سی سی پی کے جارج فلوئیڈ کی موت کے بعد امریکہ کے اقدامات کو بنیادی انسانی حقوق اور آزادی سے اپنے مسلسل انکار کے ساتھ ملانے کے عمل کو اس  کی دھوکہ دہی کے طور پر دیکھا جانا چاہیے۔ چین نے اچھے وقتوں میں بھی اشتراکیت کو بے رحمانہ طریقے سے مسلط کیا ہے۔ امریکہ نے انتہائی مشکل ادوار میں بھی آزادی کا تحفظ کیا ہے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں