rss

حالات کی قابل اعتماد 5جی فروخت کنندگان کے حق میں تبدیلی

English English, Português Português, Español Español, 中文 (中国) 中文 (中国), Français Français, العربية العربية, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
24 جون 2020

وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان

 

حالات ”ہواوے” کے مخالف رخ اختیار کر رہے ہیں کیونکہ دنیا بھر کے شہریوں کو چینی کمیونسٹ پارٹی کے نگرانی کے نظام سے لاحق خطرے کا احساس ہو رہا ہے۔ ہواوے کے دنیا بھر میں مواصلاتی عاملین سے کیے گئے  معاہدے تحلیل ہو رہے ہیں کیونکہ ممالک صرف قابل اعتماد فروخت کنندگان کو ہی اپنے 5 جی نیٹ ورک میں کام کی اجازت دے رہے ہیں۔  چیک ریپبلک، پولینڈ، سویڈن، ایسٹونیا، رومانیہ، ڈنمارک اور لٹویا ایسے ممالک کی نمایاں مثال ہیں۔ حال ہی میں یونان نے اپنے 5جی انفراسٹرکچر کی تعمیر کے لیے ہواوے کے بجائے ایرکسن سے کام لینے پر رضامندی ظاہر کی ہے۔

دنیا بھر میں چند سب سے بڑی ٹیلی کام  کمپنیاں بھی صاف ستھرے مواصلاتی اداروں میں تبدیل ہو رہی ہیں۔ ہم نے فرانس میں اورنج، انڈیا میں جیو، آسٹریلیا میں ٹیلسٹرا، جنوبی کوریا میں ایس کے اور کے ٹی، جاپان میں این ٹی ٹی اور برطانیہ میں او2 کا یہی معاملہ دیکھا ہے۔ چند ہفتے پہلے کینیڈ امیں تین بڑی مواصلاتی کمپنیوں نے ایرکسن، نوکیا اور سام سنگ کے ساتھ شراکت قائم کرنے کا فیصلہ کیا کیونکہ رائے عامہ ہواوے کو کینیڈا کے 5 جی نیٹ ورکس تعمیرکرنے کی اجازت دینے کے  بڑی حد تک خلاف تھی۔

ٹیلی فونیکا نے اپنے ڈیجیٹل منشور میں کہا ہے کہ ”تحفظ بے حد اہم ہے”  اور اس کے سی ای او اور چیئرمین ہوزے ماریا الواریز۔ پیلٹ لوپز نے حال ہی میں قرار دیا کہ ”ٹیلی فونیکا کو 5جی کے حوالے سے صاف راستہ اختیار کرنے والی کمپنی ہونے پر فخر ہے۔” ٹیلی فونیکا سپین اور او2 (برطانیہ) مکمل طور سے صاف شفاف نیٹ ورکس ہیں اور ٹیلی فونیکا ڈوئچے لینڈ (جرمنی) اور ویوو (برازیل) مستقبل قریب میں کسی بھی ناقابل اعتماد فروخت کنندہ کے سازوسامان سے پاک کمپنیاں بن جائیں گی۔

صورتحال تیزی سے محفوظ  5 جی کے حق میں تبدیل ہو رہی ہے۔ جتنے زیادہ ممالک، کمپنیاں اور شہری یہ پوچھتے ہیں کہ انہیں اپنی انتہائی حساس معلومات کی حفاظت کے لیے کس پر اعتماد کرنا چاہیےتو اس کا جواب اتنا ہی واضح ہو جاتا ہے کہ : چینی کمیونسٹ پارٹی کے نگرانی کے نظام پر اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں