rss

امریکہ کی ایرانی دھاتی صنعت سے منسلک اداروں پر پابندیاں

English English, हिन्दी हिन्दी, العربية العربية

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان
25 جون 2020

 

ایران کی حکومت دھاتوں کی برآمد سے حاصل ہونے والی آمدنی نامزد غیرملکی دہشت گرد تنظیم پاسداران انقلاب کو مالی وسائل مہیا کرنے اور مشرق وسطیٰ اور دیگر جگہوں پر ضرررساں سرگرمیوں کے لیے استعمال کرتی ہے۔ آج امریکہ نے ایران پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی مہم میں ایران کی دھاتی صنعت سے منسلک چار اداروں اور اس کے دھاتی کارخانوں کو اہم نوعیت کا سامان منتقل کرنے والے ایک ادارے کو پابندیوں کے لیے نامزد کیا ہے۔

خاص طور پر امریکہ نے  تارا سٹیل ٹریڈنگ جی ایم بی ایچ، میٹل سٹیل، پیسیفک سٹیل ایف زیڈ ای، بیٹر فیوچر جنرل ٹریڈنگ کمپنی ایل ایل سی، توکا میٹل ٹریڈنگ ڈی ایم سی سی، ساؤتھ  ایلومینیم کمپنی، سرجان جہان سٹیل کمپنی اور ایران سنٹرل آئرن اور کمپنی کو انتظامی حکم 13871 کے سیکشن 1 (اے) کی مطابقت سے پابندیوں کے لیے نامزد کیا ہے اور انہیں خصوصی طور پر نامزد غیرملکی شہریوں اور پابندیوں کی زد میں آنے والے افراد کی فہرست (ایس ڈی این لسٹ) میں شامل کیا ہے۔ ان اداروں پر یہ پابندیاں ایران کی مبارک سٹیل کمپنی سے وابستگی کے باعث عمل میں آئیں جس کے اثاثے اور اثاثوں میں مفادات پر ایران میں لوہے، سٹیل اور ایلومینیم کے شعبوں میں کام کرنے کی پاداش میں انتظامی حکم 13871 کے تحت پابندی عائد کی جا چکی ہے۔

امریکہ نے ایران سے متعلق آزادی اور اسلحے کے پھیلاؤ سے نمٹنے کے قانون کے سیکشن 1245 کی مطابقت سے گلوبل انڈسٹریل اینڈ انجینئرنگ سپلائی لمیٹڈ کو بھی پابندی کے لیے نامزد کیا ہے۔ گلوبل انڈسٹریل اینڈ انجینئرنگ سپلائی لمیٹڈ کا تعلق چین اور ہانگ کانگ سے ہے  جس نے 2019 میں جانتے بوجھتے ہوئے 300 میٹرک ٹن گریفائیٹ اسلامک ریپبلک آف ایران شپنگ لائنز (آئی آر آئی ایس ایل) کو منتقل کیا جو کہ پابندیوں کی فہرست میں شامل ایرانی ادارہ ہے۔ گریفائٹ ایران کی دھاتی صنعت کے لیے لازمی حیثیت رکھتا ہے۔ آج ہم اس باع کا اعادہ کرتے ہیں کہ  آئی آر آئی ایس ایل کے ساتھ کاروبار کرنے والے افراد یا ایران کو گریفائیٹ کی ممنوعہ منتقلی کے ذمہ دار پابندیوں کا خطرہ مول لیں گے۔

آج اٹھائے گئے یہ اہم اقدامات پابندیوں کی زد میں آنے والے ان اداروں کے اثاثے اور اثاثوں میں مفادات کو منجمد کرتے ہیں اور ان کی امریکہ کے مالیاتی نظام تک رسائی روکتے ہیں۔ ہم ایران پر زیادہ سے زیادہ دباؤ جاری رکھیں گے یہاں تک کہ ایرانی حکومت ایک ذمہ دار ملک جیسا طرزعمل اختیار کرنے کا فیصلہ نہ کر لے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں