rss

امریکہ کی داعش کے دو سہولت کاروں پر پابندیاں

العربية العربية, English English, हिन्दी हिन्दी

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
28 جولائی 2019

وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان

 

آج امریکہ نے داعش کے دو سہولت کاروں کو پابندیوں کے لیے نامزد کر کے مشرق وسطیٰ اور دنیا بھر میں داعش کی کارروائیاں جاری رہنے میں مالی اور انتظامی مدد فراہم کرنے والے نیٹ ورکس کا خاتمہ کرنے کی اپنی کوششوں کو آگے بڑھایا۔ داعش کو شکست دینے کے لیے قائم عالمگیر اتحاد کے ورکنگ گروپ ‘کاؤنٹر آئی ایس آئی ایس فنانس گروپ’ کے معاون قائد کی حیثیت سے امریکہ نے داعش کی اپنی کارروائیوں کی انجام دہی کے لیے مالی وسائل اور دیگر مادی سہولیات پیدا کرنے اور ان کی منتقلی سے متعلق اہلیت کو محدود کرنے کے لیے اپنے شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کیا ہے۔

فاروق حمود شام میں توصل حوالہ نامی کمپنی  چلاتا تھا جس نے داعش کے ارکان کو مدد فراہم کی اوربیرون ِ شام سے داعش کے لیے رقومات منتقل کیں۔ امریکہ نے ترمیمی انتظامی حکم 13224 کی مطابقت سے حمود کو داعش کی مدد، اعانت یا اسے مالی، مادی یا ٹیکنالوجی سے متعلق معاونت فراہم کرنے یا مالیاتی یا دیگر خدمات دینے پر پابندیوں کے لیے نامزد کیا ہے۔ عدنان محمد امین الراوی نے ترکی میں داعش کے سہولت کار کی حیثیت سے کام کیا ہے۔ امریکہ نے ترمیمی انتظامی حکم 13224 کی مطابقت سے الراوی کو داعش کے لیے یا اس کی جانب سے کام کرنے پر پابندیوں کے لیے نامزد کیا ہے۔ 2016 سے اب تک الراوی کے خاندان کے متعدد ارکان کو بھی داعش کی مالیاتی کارروائیوں میں سہولت دینے پر انتظامی حکم 13224 کے تحت پابندیوں کے لیے نامزد کیا جا چکا ہے۔

ہم نے مشرق وسطیٰ میں داعش کے امدادی نیٹ ورکس کو کمزور کرنے میں نمایاں پیشرفت کی ہے، مگر اب بھی بہت سا کام باقی ہے۔ ہم داعش کو شکست دینے کے لیے عالمگیر اتحاد کا کام جاری رکھتے ہوئے ان اقدامات اور ایسی دیگر کارروائیوں پر ‘کاؤنٹر آئی ایس آئی ایس فنانس گروپ’ میں اپنے شراکت داروں کے ساتھ بات چیت کے منتظر ہیں۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں