rss

اسد حکومت کے غوطہ پر کیمیائی ہتھیاروں سے وحشیانہ حملے کی برسی

العربية العربية, English English, Español Español, Português Português, Français Français, Русский Русский

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجراء
21 اگست 2020
اسد حکومت کے غوطہ پر کیمیائی ہتھیاروں سے وحشیانہ حملے کی برسی
ترجمان دفتر خارجہ مورگن اورٹیگس کا بیان

آج شامی جنگ کی تاریخ میں ایک افسوسناک دن کی یاد منائی جا رہی ہے۔ 21 اگست 2013 کو دمشق کے نواحی علاقے غوطہ میں علی الصبح اسد حکومت نے 1400 سے زیادہ شامی شہریوں کو سرن گیس سے کیے  گئے کیمیائی حملے میں ہلاک کر دیا جن میں بہت سے بچے بھی شامل تھے۔

امریکہ کے ایک محتاط اندازے کے مطابق اسد حکومت نے اس جنگ کے آغاز سے اب تک اپنے ہی لوگوں کے خلاف کم از کم 50 مرتبہ کیمیائی ہتھیار استعمال کیے ہیں۔ آج ہم اسد کے کیمیائی ہتھیاروں سے حملوں کے تمام متاثرین کو یاد کرتے ہیں اور انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔

امریکہ کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے مکمل خاتمے اور اسد حکومت سے شامی عوام کے خلاف غوطہ میں کیے جانے والے حملوں نیز بہت سے دوسرے وحشیانہ اقدامات پر جواب طلبی کا عہد کیے ہوئے ہے۔ ایسے بعض اقدامات جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم کی ذیل میں آتے ہیں۔

امریکہ اور دوسرے ذمہ دار ممالک نے گزشتہ مہینے کیمیائی ہتھیاروں کے امتناع سے متعلق ادارے (او پی سی ڈبلیو) میں کیمیائی ہتھیار رکھنے اور ان کے استعمال کی پاداش میں  شام کی مذمت کرنے اور ایسے ہتھیاروں کے خاتمے سے متعلق شام کے لیے اقدامات تجویز کر کے بے مثل قدم اٹھایا ہے۔ شام کی جانب سے مقررہ تاریخ تک ان اقدامات پر عملدرآمد میں ناکامی کی صورت میں ‘او پی سی ڈبلیو’ کو مکمل ادارے یعنی اس کے  ریاستی فریقین کی سطح پر شام کے خلاف مزید کارروائی کے لیے کہا جائے گا۔

علاوہ ازیں متعدد اختیارات بشمول انتظامی حکم 13894 اور’ سیزر سیریا سویلین پروٹیکشن ایکٹ’ ہمیں اسد حکومت کو اس کے متواتر مظالم کے ارتکاب بشمول کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال میں مدد دینے والوں کے خلاف سفری و مالیاتی پابندیاں عائد کرنے کا اختیار دیتے ہیں۔ مثال کے طور پر گزشتہ روز ہم نےاسد کے چھ مزید مالیاتی، سیاسی اور عسکری مشیروں کے خلاف پابندیوں کا اعلان کیا تھا۔ یہ امریکہ کی جانب سے اسد حکومت اور اس کے مددگاروں کے احتساب کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کی چند مثالیں ہیں۔ اس افسوسناک دن پر ہم عالمی برادری پر زور دیتے ہیں کہ وہ اسد حکومت سے اس کے وحشیانہ اقدامات پر جواب طلبی اور دنیا کو کیمیائی ہتھیاروں سے ہمیشہ کے لیے نجات دلانے کے لیے اپنی کوششوں کو آگے بڑھائے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں