rss

امریکہ کی جانب سے برما میں انصاف اور احتساب کا مطالبہ برقرار

हिन्दी हिन्दी, English English

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
ترجمان دفتر خارجہ مورگن اورٹیگس کا بیان
25 اگست 2020

 

برما کی سکیورٹی فورسز کی جانب سے ہزاروں روہنگیا مرد، خواتین اور بچوں کے خلاف وحشیانہ حملے شروع ہونے سے تین سال بعد امریکہ متاثرین کے لیے انصاف اور ان حملوں کے ذمہ داروں کے احتساب کا مطالبہ دہراتا ہے۔ علاوہ ازیں، راخائن ریاست میں بڑھتی ہوئی لڑائی کو دیکھتے ہوئے ہم تشدد کے خاتمے، مسائل کو بات چیت کے ذریعے حل کرنے، مقامی لوگوں کے تحفظ کے لیے ازسرنو کوششوں، اور متاثرہ علاقوں میں انسانی امداد کی بلارکاوٹ رسائی ممکن بنانے پر زور دیتے ہیں۔ مقامی آبادی سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی ہلاکتوں اور ہزاروں افراد کے بے گھر ہونے پر امریکہ کی تشویش برقرار ہے۔ ایسے واقعات مہاجرین اور اندرون ملک بے گھر ہونے والوں کی رضاکارانہ واپسی کے امکانات کو کمزور اور امن کے امکانات کو ختم کرتے ہیں۔

ہم برما کے حکام پر زور دیتے ہیں کہ وہ مہاجرین کی محفوظ، رضاکارانہ، باوقار اور دیرپا واپسی کے لیے سازگار حالات پیدا کریں اور راخائن ریاست سے متعلق کوفی عنان کے زیرقیادت مشاورتی کمیشن کی سفارشات پر عملدرآمد کی کوششوں میں تیزی لائیں۔ امریکہ نے برما اور بنگلہ دیش میں اس بحران سے متاثرہ تمام لوگوں کی تکالیف میں کمی لانے کے لیے 2017 سے اب تک 951 ملین ڈالر سے زیادہ امداد مہیا کی ہے۔ ہم 860,000 سے زیادہ روہنگیا باشندوں کی میزبانی کے حوالے سے مسلسل فیاضانہ کوششوں پر بنگلہ دیش کی بھرپور ستائش کرتے ہیں۔ ہم دوسرے ممالک سے کہتے ہیں کہ وہ روہنگیا کے لیے انسانی امداد کا تسلسل یقینی بنائیں اور اس بحران کو حل کرنے کی کوششوں کو تیز کریں۔

امریکہ نے متاثرین کے لیے انصاف اور مظالم کے ذمہ داروں کا احتساب کرنے کے لیے کڑے اقدامات اٹھائے ہیں۔ ایسے اقدامات میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کرنے والے اعلیٰ سطحی فوجی حکام اور یونٹوں پر مالیاتی اور ویزے کی پابندیاں، اقوام متحدہ کے تفتیشی طریقہ ہائے کار کی حمایت، اور عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) کی سماعتوں میں مکمل طور سے شرکت اور عدالتی احکامات پر عمل کے لیے  برما کی حوصلہ افزائی شامل ہیں۔ ہم ایسے مظالم کا ارتکاب کرنے والوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے عالمی برادری کے مستقل عزم کو سراہتے ہیں۔ اس حوالے سے ابھی مزید بہت سا کام ہونا باقی ہے۔

ہم آمرانہ حکومت کے اثرات پر قابو پانے، جمہوریت کو وسعت دینے اور امن کے حصول کے لیے برما کے عوام کی کوششوں میں بدستور ان کے ساتھ ہیں۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں