rss

امریکہ کی پاسداران انقلاب ۔ قدس فورس کے مددگار ایرانی توانائی اداروں پر پابندیاں

Português Português, English English, Español Español, العربية العربية, Français Français, Русский Русский

امریکی دفتر خارجہ
دفتر برائے ترجمان
برائے فوری اجرا
26 اکتوبر 2020
وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو کا بیان

 

ایران کی حکومت اپنے قدرتی وسائل کی دولت کو ایرانی عوام کے حالات زندگی بہتر بنانے پر خرچ کرنے کے بجائے اپنے تیل کو پاسداران انقلاب۔قدس فورس (آئی آر جی سی۔کیو ایف) اور اپنے دہشت گرد آلہ کاروں کی مدد پر خرچ کرنے کو ترجیح دیتی ہے جو پورے مشرق وسطیٰ میں افراتفری اور تباہی پھیلاتے ہیں۔ ہم ایسا نہیں ہونے دیں گے۔

آج امریکہ انتظامی حکم 13224 (ترمیمی) کی مطابقت سے ایران کی حکومت کے متعدد اداروں اور ریاستی ملکیت میں چلنے والے ایسے کاروباروں پر پابندیاں نافذ کر رہا ہے جو ایران کے توانائی کے شعبے میں کام کرتے ہیں جس نے آئی آر جی سی۔کیو ایف کو مالی مدد مہیا کی ہے۔ ہم ان اداروں اور کاروباروں سے متعلق متعدد افراد، اداروں اور بحری جہازوں پر بھی پابندیاں عائد کر رہے ہیں۔ ان میں ایران کی وزارت پیٹرولیم اور وزیر پٹرولیم، ایران کی قومی آئل کمپنی، ایران کی قومی ٹینکر کمپنی اور 21 دیگر افراد، ادارے اور بحری جہاز شامل ہیں جو آئی آر جی سی۔کیو ایف کی مدد یا اس کے لیے خدمات مہیا کرنے میں ملوث ہیں۔

یہ پابندیاں ایران کی حکومت کی اپنے ہمسایوں کے لیے خطرہ بننے اور مشرق وسطیٰ کو غیرمستحکم  کرنے کی اہلیت محدود کرنے کے لیے اس پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی مہم میں ایک اہم قدم ہیں۔ ہمارا یہ اقدام نامزد افراد اور اداروں کی سرگرمیاں مزید محدود کرنے، ایرانی حکومت کی اپنی جیبیں بھرنے کے لیے مالی وسائل تک رسائی کو مزید کم کرنے اور دنیا بھر میں دہشت گردی کی معاونت کے امکان کو مزید محدود کر دے گا۔ ایران سے خام تیل لینے والے بقیہ چند کرداروں کو علم ہونا چاہیے کہ وہ مشرق وسطیٰ بھر میں ایران کی ضرررساں سرگرمی میں مالی مدد فراہم کر رہے ہیں۔ اس سرگرمی میں ایران کی جانب سے دہشت گردی کی مدد بھی شامل ہے۔ زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی مہم ایرانی عوام کے خلاف نہیں بلکہ ایران کی حکومت کے خلاف ہے۔ اسی لیے ان نامزدگیوں کے ساتھ محکمہ خزانہ نے امدادی تجارت سے متعلق ایک نیا عمومی اجازت نامہ اور متعلقہ رہنمائی بھی جاری کی ہے۔ ایرانی حکومت کے دیرینہ متاثرین اس کے اپنے عوام ہیں اور امریکہ امدادی اشیا تک ایرانی عوام کی رسائی کی اہلیت بہتر بنانے میں مدد دیتا ہے۔

آج کے اقدامات کی بابت مزید معلومات بشمول پابندیوں کا سامنا کرنے والے افراد، اداروں اور بحری جہازوں کی مکمل فہرست جاننے کے لیے براہ مہربانی محکمہ خزانہ کی پریس ریلیز دیکھیے۔


یہ ترجمہ ازراہِ نوازش فراہم کیا جا رہا ہے اور صرف اصل انگریزی ماخذ کو ہی مستند سمجھا جائے۔
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں