rss
تازہ ترین خبر
  • سب صاف کریں
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں
2018-07-22

‘ایرانی عوام کے اظہار کی حمایت’ وزیر خارجہ مائیکل آر پومپئو کا رونلڈ ریگن صدارتی فاؤنڈیشن و لائبریری میں خطاب

وزیر خارجہ پومپئو: آپ سب کا شکریہ (تالیاں) بے حد شکریہ۔ فریڈ، اس قدر مشفقانہ تعارف پر میں آپ کا مشکور ہوں۔ اس سے مجھے وہ وقت یاد آ گیا جب میں وزیر خارجہ کے طور پر تعیناتی سے قبل توثیقی عمل سے گزر رہا تھا اور وہ لوگ ان تمام افراد سے رابطہ رہے تھے جن سے میں زندگی میں مل چکا تھا۔ انہوں نے ایک ایسے نوجوان کو ڈھونڈ نکالا جس نے میرے ساتھ لاس اینجلس میں باسکٹ بال کھیلی تھی۔


2018-07-20

وزیر خارجہ مائیکل آر پومپئو اور اقوام متحدہ میں امریکہ کی مستقل سفیر نکی ہیلی کی صحافیوں سے گفتگو

وزیر خارجہ پومپئو: سبھی کو سہ پہر بخیر۔ سب سے پہلے میں اپنی بہترین دوست سفیر ہیلی اور یہاں اقوام متحدہ میں ان کی شاندار ٹیم کی تعریف کرنا چاہتا ہوں۔ شمالی کوریا اور متعدد دیگر امور پر امریکی مفادات کی تکمیل میں ان کی قیادت یہاں آج صبح واضح ہو کر سامنے آئی ہے اور بہت زبردست ٹیم ان کی معاونت کر رہی ہے۔


خلائی تحقیق کے دن پر صدارتی پیغام

خلائی تحقیق کے دن، ہماری قوم امریکہ کے خلائی سفر کی تاریخ کا جشن منا رہی ہے اور اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہ ہم دنیا بھر میں خلائی تحقیق میں قائدانہ کردار ادا کرتے رہیں گے۔


2018-07-19

امریکہ اور بھارت کے درمیان 2+2 مزکرات 6 ستمبر کو ہونگے

امریکہ کو یہ اعلان کرتے ہوئے مسرت ہو رہی ہے کہ امریکہ اور بھارت کے درمیان '2+2' مزاکرات نیو دلی میں 6 ستمبر کو ہونگے۔

دستیاب ہے:

مذہبی آزادی کے فروغ کے لیے پہلے وزارتی اجلاس سے نائب صدر پنس کا خطاب

نائب صدر مائیک پنس 26 جولائی کو واشنگٹن ڈی سی میں امریکی دفتر خارجہ کے زیراہتمام مذہبی آزادی کے فروغ کے لیے منعقد ہونے والے پہلے وزارتی اجلاس سے خطاب کریں گے۔ نائب صدر عالمی سطح پر مذہبی آزادی کی اہمیت اور امریکی خارجہ پالیسی میں اس کے کردار پر حکومتوں اور عالمی اداروں کے نمائندوں سے بات کریں گے۔


دفتر خارجہ کے اعلیٰ افسر کا وزیرخارجہ پومپئو کے رونلڈ ریگن صدارتی لائبریری میں ایران سے متعلق خطاب کا جائزہ

نگران: شکریہ، سبھی کو سہ پہر بخیر۔ آج کی کال میں شمولیت پر آپ کا شکریہ۔ ہمیں خوشی ہے کہ آج دفتر کارجہ کے اعلیٰ افسر اتوار کو رونلڈ ریگن صدارتی لائبریری میں وزیرخارجہ پومپئو کے ایران سے متعلق بیان کے جائزے کے لیے یہاں موجود ہیں۔ رپورٹنگ کے بجائے صرف آپ کے حوالے کے لیے ہم (دفتر خارجہ کے اعلیٰ افسر) کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ اب سے ہم انہیں دفتر خارجہ کے اعلیٰ افسر کہہ کر پکاریں گے۔ وہ ابتدا میں مختصراً بات کریں گے اور پھر ہم آپ کے سوالات لیں گے۔ یاد دہانی کے طور پر بتاتے چلیں کہ کال کے اختتام تک یہاں ہونے والی بات چیت کی نشرواشاعت پر پابندی رہے گی۔ اس کے ساتھ ہی ہم آغاز کرتے ہیں۔ اب میں دفتر خارجہ کے اعلیٰ افسر کو بات کی دعوت دیتا ہوں۔


2018-07-18

‘انسانی حقوق کونسل سے امریکی دستبرداری: اثرات اور آئندہ اقدامات’

بہت شکریہ

بہت شکریہ کے۔ ہیریٹیج فاؤنڈیشن کا بھی شکریہ۔مجھے یہاں واپس آکر خوشی ہوئی اور میں اس کام کے لیے آپ کی شکر گزار ہوں جو یہاں ہو رہا ہے۔


2018-07-17

انسداد دہشت گردی کے لیے مقامی حکومتوں کی کوششوں میں اضافہ

ممباسا کاؤنٹی کے گورنر حسن جوہو آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں 'مضبوط شہری نیٹ ورک کی عالمگیر کانفرنس' سے خطاب کر رہے ہیں۔

عالمگیر سطح پر انسداد دہشت گردی کے سلسلے میں تعاون کے لیے دفتر خارجہ کے شریک کار ادارے 'دی انسٹیٹیوٹ فار سٹریٹیجک ڈائیلاگ' نے حال ہی میں 10 تا 12 جولائی آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں 'مضبوط شہری نیٹ ورک کی عالمگیر کانفرنس' کا اہتمام کیا۔ پرتشدد انتہاپسندی کی روک تھام (سی وی ای) سماج کے تمام حصوں کی شمولیت پر مبنی طریق کار کا تقاضا کرتی ہے جو مقامی سطح پر ایسے عوامل سے نمٹنے میں مدد دیتا ہے جن کے ذریعے دہشت گرد لوگوں کو اپنے ساتھ ملاتے ہیں۔ اگرچہ ان کوششوں کے لیے سماجی فریقین کو متحرک کرنے کے لیے مقامی رہنما بہترین کردار ادا کر سکتے ہیں تاہم ان میں سے چند ایک کو ہی عالمی سطح پر جانے مانے بہترین طریقہ ہائے کار کی تربیت حاصل ہے یا اپنے تجربات کے تبادلے کا کوئی پلیٹ فارم میسر ہے۔ مضبوط شہری نیٹ ورک کے قیام کے پیچھے یہی محرک تھا۔ تین سال قبل دفتر خارجہ نے غیرسرکاری ادارے 'انسٹیٹیوٹ فار سٹریٹیجک ڈائیلاگ' کی شراکت سے اس کے آغاز میں معاونت کی۔ مضبوط شہری نیٹ ورک چھ براعظموں میں 120 ذیلی قومی حکومتوں کو پرتشدد انتہاپسندی کی روک تھام کے لیے بہتر طریقہ ہائے کار اختیار کرنے اور ان کے تبادلے نیز انسداد دہشت گردی کے تناظر میں آسان اہداف کے تحفظ کے لیے فورم مہیا کرتا ہے۔


ممنوعہ علاقے کی جانب سفر

'ممنوعہ علاقے کا منظر' جہاں ہزاروں لوگ برما کی سرحدی باڑ اور بنگلہ دیش کے درمیان بے یارومددگار رہ رہے ہیں۔ (اینا سلیٹری، یوایس ایڈ)

امریکہ اور بنگلہ دیش میں شراکت، تعاون اور دوستی کی طویل تاریخ ہے۔ خاص طور پر یوایس ایڈ کی بنگلہ دیش میں جڑیں خاصی گہری ہیں۔ گزشتہ ماہ جب میں ڈھاکہ میں تھا تو بہت سے بنگلہ دیشیوں نے مجھے بتایا کہ انہیں 1971 میں آزادی کے بعد وہ دن یاد ہیں جب انہوں نے یوایس ایڈ سے خوراک وصول کی تھی جس پر اس کا نشان بھی بنا ہوا تھا۔


ارکان کانگریس کے ساتھ ملاقات میں صدر ٹرمپ کی بات چیت

صدر ٹرمپ: آپ سب کا شکریہ۔ گزشتہ روز میں یورپ کے دورے سے واپس آیا ہوں جہاں میں نے امریکی مستقبل کو مزید پرامن بنانے کے لیے خطے بھر کے رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں۔ ہم اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر کڑی محنت کر رہے ہیں اور پوری دنیا میں مصروف عمل ہیں۔ ہم امن کے لیے کام کریں گے۔