rss
تازہ ترین خبر
  • سب صاف کریں
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں
2018-06-12

امریکی صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ اور شمالی کوریا کے چیئرمین کم جانگ ان کا سنگاپور میں ملاقات کے موقع پر مشترکہ اعلامیہ

امریکہ کے صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ اور شمالی کوریا کے کمیشن برائے ریاستی امور کے چیئرمین کم جانگ ان نے 12 جون 2018 کو سنگاپور میں پہلی تاریخی ملاقات کی۔


صدر ٹرمپ اور شمالی کوریا کے چیئرمین کم جانگ ان کی باہمی دوطرفہ ملاقات سے قبل بات چیت

صدر ٹرمپ: جناب چیئرمین، آپ سے ملاقات بے حد اعزاز کی بات ہے۔ میں جانتا ہوں کہ ہم نے باہم مل کر بہت بڑی کامیابی حاصل کی ہے اور ہم ایک بڑا مسئلہ حل کریں گے، یہ ایک بڑی مشکل ہے جو اب تک حل نہیں ہو پائی۔ میں سمجھتا ہوں کہ مل کر کام کرنے سے ہم اس مسئلے کو حل کر لیں گے۔ تو یہ بہت بڑے اعزاز کی بات ہے۔ آپ کا بے حد شکریہ۔


صدر ٹرمپ اور شمالی کوریا کے چیئرمین کم جانگ ان کی مشترکہ اعلامیے پر دستخط کے موقع پر بات چیت

صدر ٹرمپ: تو ہم ایک نہایت اہم دستاویز پر دستخط کر رہے ہیں، یہ خاصی جامع دستاویز ہے۔ ہم نے ایک ساتھ بہت اچھا وقت گزارا، یہ بہت زبردست تعلق ہے۔ میں ڈھائی بجے نیوز کانفرنس کروں گا جس میں دو گھنٹے سے کچھ کم وقت باقی ہے۔ ہم اس پر تفصیل سے بات کریں گے۔ اسی دوران میرا خیال ہے کہ وہ چیئرمین کم یا میری جانب سے اس کا اجرا کریں گے۔ اس دستاویز پر دستخط کرنا ہم دونوں کے لیے اعزاز ہے۔ شکریہ۔


صدر ٹرمپ کی پریس کانفرنس

صدر: سبھی کا بے حد شکریہ۔ ہم آپ کے قدردان ہیں۔ ہم واپسی کے لیے تیار ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹے بے حد غیرمعمولی تھے۔ دراصل یہ تین ماہ بھی بہت غیرمعمولی رہے۔ ہم نے یہ ڈوری چیئرمین کم اور ان کے لوگوں، ان کے نمائندوں کو تھمائی۔ اس کے ساتھ بہت کچھ ہے۔ یہ بہت بڑی جگہ ہے۔ یہ حیرت انگیز جگہ بن سکتی ہے۔ اگر آپ سوچیں تو جنوبی کوریا اور چین کے درمیان، اس میں بہت کچھ ہو سکتا ہے۔ میرے خیال میں وہ یہ بات سمجھتے ہیں اور درست قدم اٹھانا چاہتے ہیں۔


2018-06-11

صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ کی سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے ملاقات

صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ نے آج سنگاپور کے وزیراعظم لی سین لونگ سے ملاقات کی۔ صدر ٹرمپ نے 12 جون کو شمالی کوریا کے رہنما کم جانگ ان کے ساتھ اپنی ملاقات کی میزبانی کے سلسلے میں فیاضی اور شراکت پر وزیراعظم لی کا شکریہ ادا کیا۔


2018-06-07

افغانستان کے اعلان جنگ بندی پر دفتر خارجہ کے اعلیٰ عہدیدار کی بریفنگ

نگران: شکریہ میڈم، سبھی کو سہ پہر بخیر اور افغانستان میں جنگ بندی کے حوالے سے پس منظر بریفنگ میں شرکت پر آپ کا شکریہ۔ آج (دفتر خارجہ کے اعلیٰ عہدیدار) ہمارے ساتھ موجود ہیں۔ ہم انہیں دفتر خارجہ کا اعلیٰ عہدیدار کہیں گے۔ یاد دہانی کے طور پر بتاتے چلیں کہ یہ پس منظر بریفنگ ہے جس کے اختتام تک اس کی نشرواشاعت پر پابندی رہے گی۔

دستیاب ہے:

ترجمان دفتر خارجہ ہیدا نوئرٹ کا بیان – وزیرخارجہ پومپئو کا کینیڈا، سنگاپور، جنوبی کوریا اور چین کا دورہ

وزیرخارجہ مائیک پومپئو صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ گروپ آف سیون (جی7) کے اجلاسوں میں شرکت کے لیے کینیڈا کے شہر کیوبک میں چارلیوئی جائیں گے۔ ان اجلاسوں میں کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی، جاپان اور برطانیہ کے رہنما بھی شریک ہو رہے ہیں۔


2018-06-05

شام میں داعش کو شکست دینے کے لیے جاری کارروائی کی معاونت وزیرخارجہ پومپئو کا بیان

ہم اتوار کو شامی جمہوری فورسز کی جانب سے داشیشہ میں داعش کے خلاف کارروائیوں کے آغاز کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ داشیشہ شمال مشرقی شام میں داعش کا بدنام گڑھ ہے جہاں سے یہ کئی سال سے شامی اور عراقی عوام کو دہشت کا نشانہ بناتی چلی آئی ہے۔


2018-06-04

افغانستان میں علما کونسل کے اجلاس پر خودکش حملہ

امریکہ کابل میں امن کے نام پر جمع ہونے والے مذہبی رہنماؤں اور علما ءپر خودکش حملے کی مذمت کرتا ہے۔ بم حملے سے پہلے علما نے ایک فتویٰ جاری کیا جس میں افغان حکومت کے خلاف جہاد کے کسی بھی جواز کو رد کیا گیا اور اسلامی قانون کے تحت خوکش حملوں کو حرام قرار دیتے ہوئے تمام فریقین سے جنگ روکنے کا مطالبہ کیا گیا۔ افغانستان میں عام شہریوں اور امن کے لیے کام کرنے والے مذہبی رہنماؤں پر آج ہونے والے حملے سے دہشت گردوں کی سنگدلی عیاں ہو گئی ہے اور یہ فعل ان اسلامی اصولوں اور اس جواز سے متضاد ہے جس کے دفاع کا وہ دعویٰ کرتے ہیں۔

دستیاب ہے:

2018-06-03

وزیردفاع ماٹس کی انڈین وزیراعظم مودی سے ملاقات

وزیر دفاع کے ترجمان کیپٹن جیف ڈیوس کے مطابق:

2 جون کو انٹرنیشنل انسٹیٹیوٹ آف سٹریٹیجک سٹڈیز کے زیراہتمام 17ویں ایشیائی سکیورٹی کانفرنس کے موقع پر وزیر دفاع ماٹس نے انڈین وزیراعظم مودی سے ملاقات کی۔ سنگاپور میں منعقدہ اس کانفرنس کو شنگریلا ڈائیلاگ بھی کہا جاتا ہے۔

دستیاب ہے: