rss
تازہ ترین خبر
  • سب صاف کریں
تازہ ترین ای میل
تازہ ترین اطلاعات یا اپنے استعمال کنندہ کی ترجیحات تک رسائی کے لیے براہ مہربانی اپنی رابطے کی معلومات نیچے درج کریں
2017-12-12

‘2017 اور مستقبل میں خارجہ پالیسی کے مسائل کا حل’ وزیرخارجہ کا اٹلانٹک کونسل کوریا فاؤنڈیشن فورم 2017 سے خطاب

وزیرخارجہ ٹلرسن: شکریہ سٹیفن، اس قدر پرجوش خیرمقدم پر میں آپ کا مشکور ہوں۔ ہم ایک دوسرے کو طویل عرصہ سے جانتے ہیں اور میں اپنی گزشتہ زندگی میں اکثروبیشتر آپ سے دنیا کے حوالے سے اپنے نکتہ ہائے نظر کا تبادلہ کرتا رہا ہوں تاکہ مجھے دائیں بائیں درست راہ اختیار کرنے میں صلاح مل سکے۔ اس سلسلے میں آپ کے مشورے ہمیشہ دانشمندانہ اور درست تھے۔ آپ کا شکریہ۔


2017-12-11

انسانی حقوق سے متعلق عالمگیر میگنٹسکی احتساب قانون پر عملدرآمد

آج صدر اور محکمہ انصاف کے ساتھ دفتر خارجہ نے ایسے افراد کے خلاف کارروائی کی جو دنیا بھر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور بدعنوانی میں ملوث پائے گئے ہیں۔

دستیاب ہے:

شمالی کوریا میں انسانی حقوق کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس سے سفیر ہیلی کا خطاب

اقوام متحدہ میں امریکہ کی مستقل نمائندہ نکی ہیلی نے شمالی کوریا میں انسانی حقوق کی صورتحال پر سلامتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کیا۔ سلامتی کونسل کے اجلاس سے فوری بعد سفیر ہیلی نے ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں جبراً ملک واپس لائی گئی شمالی کوریا کی خاتون کے تجربات پر روشنی ڈالی ڈالی گئی اور اس ضمن میں شمالی کوریا کے منحرفین کی شہادتیں پیش کی گئیں۔


2017-12-10

قریب مشرقی امور کے قائم مقام وزیرڈیوڈ سیٹرفیلڈکی پریس بریفنگ

آج قریب مشرقی امور کے قائم مقام معاون وزیر ڈیوڈ سیٹرفیلڈ ہمارے ساتھ موجود ہیں۔ 5 دسمبر 2017 کو صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور امریکی سفارت خانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے کے منصوبے کا اعلان کیا۔ قائم مقام معاون وزیر سیٹرفیلڈ اس پالیسی کے حوالے سے مزید تفصیلات بیان کریں گے۔ قائم مقام معاون وزیر سیٹر فیلڈ مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ سے متعلق دفتر خارجہ کے اعلیٰ ترین عہدیدار ہیں۔


انسانی حقوق کے عالمی دن پر وزیرخارجہ ٹلرسن کا بیان

انہتر برس پہلے دوسری جنگ عظیم کے بعد آج کے دن اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے تمام انسانوں کے پیدائشی وقار اور مساوی و ناقابل انتقال حقوق کے اعتراف اور سربلندی کے لیے انسانی حقوق کا عالمگیر اعلامیہ منظور کیا اور قرار دیا کہ یہ حقوق دنیا میں آزادی، انصاف اور امن کی بنیاد ہیں۔


2017-12-08

اسرائیل میں امریکہ سفارتخانہ یروشلم منتقل کرنے کے فیصلے پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس سے امریکی سفیر نکی ہیلی کا خطاب

امریکی قوم نسبتاً جلد باز ہے۔ 1948میں امریکہ آزاداسرائیلی ریاست کو تسلیم کرنے والا پہلا ملک تھا۔ 1995میں امریکی کانگریس نے اعلان کیا کہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیا جانا چاہیے اور امریکی سفارت خانہ یروشلم میں ہونا چاہیے۔


وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن اور فرانسیسی وزیر خارجہ یان ایو لیڈرین کی پریس کانفرنس

وزیرخارجہ ٹلرسن: صدر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ انہوں نے دفتر خارجہ کو سفارت خانہ یروشلم منتقل کرنے کا عمل شروع کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ اس میں کچھ وقت درکار ہو گا۔ ہم نے جگہ حاصل کرنا ہے، ہمیں اس پر عمارت تعمیر کرنے کی منصوبہ بندی کرنی ہے، جیسا کہ آپ نے کہا ہمیں اس حوالے سے اجازت لینا ہے، اگرچہ مجھے اس حوالے سے کوئی مشکل پیش آنے کی توقع نہیں ہے اور پھر ہم نے وہاں سفارت خانہ بنانا ہے۔ لہٰذا یہ سب کچھ اس سال نہیں ہونے والا، غالباً یہ کام اگلے سال مکمل ہو گا تاہم صدر چاہتے ہیں کہ جب ہم ایسا کرنے کے قابل ہو جائیں تو حقیقی طور سے اپنا سفارت خانہ یروشلم منتقل کر دیں۔

دستیاب ہے:

صدارتی اعلان پر مکمل عملدرآمد کا آغاز

دفتر خارجہ صدارتی اعلان 9645 (دہشت گردوں کی جانب سے امریکہ داخلے کی کوششوں کی نشاندہی یا عوامی تحفظ کو لاحق دیگر خطرات کے جائزے کی اہلیتوں میں اضافہ) پر سپریم کورٹ کی جانب سے 4 دسمبر 2017 کے احکامات کے مطابق مکمل عملدرآمد کر رہا ہے۔ دفتر خارجہ نے (مقامی وقت کے مطابق) آج بروز جمعہ 8 دسمبر 2017 سے سمندرپار امریکی سفارت خانوں اور قونصل خانوں میں کام کے آغاز پر اس اعلان کے ضمن میں مکمل عملدرآمد شروع کیا


2017-12-06

صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ کا اسرائیلی ریاست کے دارالحکومت کی حیثیت سے یروشلم کے بارے میں اعلان

یروشلم کو تسلیم کرتے ہوئے: صدر ڈونلڈ جے ٹرمپ، یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کی حیثیت سے تسلیم کرنے کا اپنا وعدہ ایفا کر رہے ہیں اور انہوں نے وزارت خارجہ کو اسرائیل میں امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے یروشلم منتقلی شروع کرنے کی ہدایت کی ہے۔


یروشلم پر صدر ٹرمپ کا بیان

میرا آج کا اعلان، اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان تنازعے کے بارے میں ایک نئی سوچ کے آغاز کا پتہ دیتا ہے۔
1995 میں کانگریس نے یروشلم سفارت خانے کا قانون وفاقی حکومت پر یہ زور دیتے ہوئے منظور کیا کہ امریکی سفارت خانہ یروشلم یہ تسلیم کرنے کی خاطر منتقل کیا جائے کہ یہ شہر – انتہائی اہم بات – اسرائیل کا دارالحکومت ہے۔ یہ قانون کانگریس نے دوطرفہ بھاری اکثریت سے منظور کیا اور چھ ماہ قبل سینیٹ نے بھی متفقہ ووٹ سے اس کا اعادہ کیا۔